Monday , August 21 2017
Home / Top Stories / فائرنگ اور چاقوزنی سے برطانوی رکن پارلیمنٹ ہلاک

فائرنگ اور چاقوزنی سے برطانوی رکن پارلیمنٹ ہلاک

لندن ۔ 16 جون (سیاست ڈاٹ کام) 41 سالہ برطانوی خاتون رکن پارلیمنٹ جس کا تعلق اپوزیشن لیبر پارٹی سے تھا، فائرنگ اور چاقوزنی کی وجہ سے اپنے حلقہ انتخاب شمالی انگلستان میں ہلاک ہوگئی۔ ایک ہفتہ قبل اس نے برطانیہ کی یوروپی یونین رکنیت کے بارے میں استصواب عامہ کا مطالبہ کیا تھا۔ لیبر پارٹی کی رکن پارلیمنٹ جوکاکس اپنے حلقہ انتخاب میں ایک اجلاس منعقد کررہی تھیں، جس میں مبینہ طور پر زبانی تکرار ہوئی اور اس کے بعد ان پر حملہ ہوا۔ 70 سے 80 سال کی درمیانی عمر والا شخص حملہ کے دوران زخمی ہوگیا اور زیرعلاج ہے۔ تاہم اس کے زخم مہلک نہیں ہے۔ مغربی یارک شائر کی پولیس نے 52 سالہ حملہ آور کو گرفتار کرکے اس کے قبضہ سے ہتھیار بشمول آتشی اسلحہ ضبط کرنے کی توثیق کی ہے اور واقعہ کی مزید تحقیقات کررہی ہے۔ گرفتار شخص کا نام ٹامی میر بتایا گیا ہے لیکن قتل کے مقصد کا تعین اور حملہ کی نوعیت کا تعین ہنوز نہیں کیا جاسکا۔ مقامی گواہوں نے کہا کہ انہوں نے فائرنگ کی آوازیں سنی تھیں جبکہ دیگر گواہوں نے چاقوزنی کے واقعہ کی گواہی دی۔ ہندوستانی نژاد ایک دکاندار سنجیو کمار نے بی  بی سی سے کہا کہ وہ فٹ پاتھ پر پڑی ہوئی تھیں اور کافی خون خارج ہورہا تھا۔ فوری طور پر ایمبولنس طلب کی گئی۔ خاتون رکن پارلیمنٹ کو ایمبولنس کے ذریعہ دواخانہ منتقل کیا گیا تھا۔ اس کی حالت نازک تھی اور زخموں سے جانبر نہ ہوسکی۔ ورثاء میں شوہر اور دو بچے شامل ہیں۔ اس کے احترام کے طور پر آئندہ جمعرات تک حکومت نے مہم ملتوی کردی۔

TOPPOPULARRECENT