Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / فالج کے حملے پر مریض کو فوری علاج کی صورت میں صحت یابی

فالج کے حملے پر مریض کو فوری علاج کی صورت میں صحت یابی

آلیو ہاسپٹل میں مذاکرہ ، ڈاکٹر وی این ماتھر و دیگر کا خطاب
حیدرآباد۔29اکٹوبر ( سیاست نیوز) فالج کے حملے اور دماغ میں خون جمع ہوجانے جیسے واقعات کا فی الفور علاج شروع کرنے کی صورت میں مریض کو فوری راحت فراہم کرتے ہوئے صحتمند بنایا جاسکتا ہے ۔ ڈاکٹر وی این ماتھر ایم ڈی‘ ڈی ایم نیورولوجی نے آج ’’آلیو ہاسپٹل ‘‘ میں منعقدہ ایک مذاکرہ سے خطاب کے دوران یہ بات بتائی ۔ انہوں نے بتایا کہ کسی بھی طرح کے اسٹروک کی صورت میں مریض کو فوری طبی امداد کی فراہمی اپاہج ہونے سے بچانے میں مددگار ثابت ہوتی ہے ۔ ڈاکٹر ماتھر نے کہا کہ 50سال سے زائد عمر والے پانچ میںایک فرد  میں اس طرح کے عارضہ لاحق ہوتے ہیں جن سے نمٹنے کیلئے فوری توجہ درکار ہے ۔ فالج کے حملے میں مریض کی صورتحال کا جائزہ لینے اور تشخیص کے ذریعہ حالت کو سدھارنے کے اقدامات ناگزیر ہوجاتے ہیں اسی لئے ہنگامی طبی عملہ کو خصوصی تربیت فراہم کئے جانے کی ضرورت ہے ۔ ہر سال 1.4تا 1.6ملین افراد اس مرض کا شکار ہوتے ہیں ‘جن میں تقریباً 0.6ملین افراد کو بروقت طبی امداد میسر نہ آنے کے سبب اُن کی موت واقع ہوجاتی ہے ۔  علاوہ ازیں یہ بیماری ایسی ہے جو کہ بڑے پیمانے پر اعضاء کو غیرکارکرد کرتے ہوئے اپاہج بنانے کا سبب بنتی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ آلیوہاسپٹل میں اس طرح کی شکایت کے ساتھ ہی اندرون ساڑھے چارگھنٹے دواخانہ سے رجوع ہونے والے مریضوں کے مؤثر علاج کا انتظام کیا گیا ہے اور اس بات پر خصوصی توجہ دی جارہی ہے کہ دوران علاج مریض کے تمام اعضاء کو کارکرد رکھا جائے تاکہ کسی بھی طرح کی معذوری سے مریض کو بچایا جاسکے ۔ انہوں نے مزید بتایا کہ اس طرح کے مریضوں کو خصوصی طبی امداد کی فراہمی کیلئے یہ ضروری ہوتا ہے کہ فوری طور پر ماہر طبی عملہ تشخیص کا عمل شروع کرے ۔فالج کے حملہ کی صورت میں فی منٹ دو ملین سیل متاثر ہوتے ہیں ‘ ان تمام اُمور کا جائزہ لینے کے بعدخصوصی طور پر آلیو ہاسپٹل میں طبی عملہ کے علاوہ ماہر ڈاکٹرس کی خدمات حاصل کی جارہی ہے تاکہ اسٹروک کی شکایات کے ساتھ رجوع ہونے والوں کے برسرموقع علاج کو یقینی بنایا جاسکے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT