Thursday , October 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / فالوآن کے بعد سری لنکا کا بہتر مظاہرہ‘منڈیس کی سنچری

فالوآن کے بعد سری لنکا کا بہتر مظاہرہ‘منڈیس کی سنچری

میزبان ٹیم پہلی اننگز میں 183 رنز پر ڈھیر

کولمبو۔5 اگسٹ (سیاست ڈاٹ کام)کولمبو میں ہندوستان کے خلاف کھیلے جارہے دوسرے ٹسٹ میں میزبان سری لنکائی ٹیم 183 رنز پر ڈھیر ہونے کے بعد جب ہندوستانی کپتان ویراٹ کوہلی نے انہیں دوبارہ بیٹنگ کیلئے طلب کیا تو نوجوان بیٹسمنوں کی جوڑی ڈیموتھ کرونارتنے اور کوسل منڈیس نے شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کرتے ہوئے دن کے اختتام پر 2 وکٹوں کے نقصان پر 209 رنز بنائے۔ پہلی اننگز میں صرف ایک ہی سیشن میں 183 رنز پر ڈھیر ہونے کے بعد مذکورہ بیٹسمنوں نے شاندار بیٹنگ کا مظاہرہ کیا جس میں نمبر 3 پر بیٹنگ کرتے ہوئے منڈیس نے 135 گیندوں میں 110 رنز اسکور کئے جبکہ اوپنر کرونا رتنے نے 200 گیندوں میں 92 رنز اسکور کئے۔ دونوں کے درمیان 191 رنز کی پارٹنرشپ رہی۔ سری لنکائی ٹیم کو اننگز شکست سے محفوظ رہنے کیلئے ہنوز 230 رنز درکار ہیں اور انہیں دو دن تک مکمل ایک ایسی وکٹ پر بیٹنگ کرنی ہے جس پر رنز بنانا آسان نہیں۔ روی چندرن اشون جو پہلی اننگز میں 5 وکٹیں حاصل کرتے ہوئے میزبان ٹیم کو ڈھیر کرنے میں کلیدی رول ادا کیا تھا، وہ دوسری اننگز میں 24 اوورس کی بولنگ کے باوجود وکٹ حاصل نہیں کرپائے جس میں انہوں نے 79 رنز دیئے جبکہ آئی سی سی ٹسٹ درجہ بندی میں پہلے مقام پر فائز رویندر جڈیجہ 16 اوورس میں 76 رنز دینے کے باوجود وکٹ حاصل نہیں کرپائے۔ ہندوستانی آل راؤنڈر ہاردک پانڈیا 5 اوورس کی بولنگ میں 12 رنز دے کر ایک وکٹ حاصل کی۔ وکٹ پر فاسٹ بولروں کیلئے موجود سازگار ماحول ختم ہوچکا ہے جس کے بعد تمام تر توجہ اسپنرس کی جوڑی اشون اور جڈیجہ پر مرکوز ہوچکی ہے۔ جیسا کہ اشون نے پہلی اننگز میں اپنے کریر میں 26 ویں مرتبہ 5 وکٹیں حاصل کرنے کا کارنامہ انجام دیا جبکہ رویندر جڈیجہ 150 ویں وکٹ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ مذکورہ بیٹسمینوں کی جوڑی کے مظاہروں کی ستائش کی جاسکتی ہے جس نے ہندوستانی اسپنرس کے خلاف بہتر حکمت عملی اختیار کرتے ہوئے مہمان ٹیم کومقابلے میں ایک آسان کامیابی سے دور رکھا۔خاص کر منڈیس کی تعریف کی جانی چاہئے جنہوں نے سوئپ شارٹس کے ذریعہ ہندوستانی اسپنرس کو وکٹ کے حصول سے باز رکھا۔منڈیس نے اپنے کریئرکی تیسری سنچری کے دوران 17 چوکے لگائے۔منڈیس نے ایک رن کے انفرادی اسکور پر شکھر دھون کی جانب سے اشون کی گیند پر مڈآن پر ایک آسان چھوڑے جانے والے کیچ کا پورا فائدہ اٹھایا اور 135 رنز کی سنچری کے دوران انہوں نے 68 رنز باونڈریز کی شکل میں حاصل کئے ۔منڈیس اور دیموتھ کے درمیان بننے والی پارٹنر شپ سری لنکا کے لئے دوسری بڑی پارٹنر شپ ہے اس سے قبل سنت جے سوریا اور روشن مہانامہ نے 1997 میں 576 رنز کا ریکارڈ بنایا ہے۔قبل ازیں ہندوستان کی پہلی اننگز میں 622/9 کے جواب میں سری لنکائی ٹیم 183 پر آل آوٹ ہوئی۔

TOPPOPULARRECENT