Wednesday , September 20 2017
Home / Top Stories / فرقہ پرستوں کیخلاف جنتا پریوار کا اتحاد ناگزیر: دیوے گوڑا

فرقہ پرستوں کیخلاف جنتا پریوار کا اتحاد ناگزیر: دیوے گوڑا

بہار کے بعد اترپردیش میں بھی بی جے پی کا گیدڑ جیسا حشر : لالو پرساد یادو

لکھنؤ 5 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) سابق وزیراعظم اور جنتادل (سیکولر) لیڈر ایچ ڈی دیوے گوڑا نے آج جنتا پریوار سے پرزور اپیل کی ہے کہ فرقہ پرست طاقتوں کے خلاف باہم متحد ہوجائیں۔ انھوں نے کہاکہ فرقہ پرستوں سے ٹکرانے کا حوصلہ اور طاقت صرف سماج وادی پارٹی میں ہے۔ سینئر قائدین ملائم سنگھ یادو، لالو پرساد یادو، شرد یادو کو چاہئے کہ ملک میں فرقہ پرستوں سے مقابلہ کرنے کے لئے آپس میں متحد ہوجائیں۔ دیوے گوڑا نے آج سماج وادی پارٹی کی سلور جوبلی تقاریب سے خطاب میں ان خیالات کا اظہار کیا اور کہاکہ یہ میرا ایقان ہے کہ سیکولر طاقتیں بہت جلد ملائم سنگھ یادو کی قیادت میں متحد ہوجائیں گی۔ گوکہ سماج وادی پارٹی میں کچھ اختلافات پائے جاتے ہیں لیکن میں نے پارٹی سے کہا ہے کہ اپنے اتحاد کو برقرار رکھیں اور ملک میں فرقہ پرست طاقتوں کے خلاف تحریک کی قیادت کریں۔ واضح رہے کہ جنتا پریوار سے منقسمہ 6 جماعتوں نے گزشتہ سال بہار اسمبلی انتخابات سے قبل اتحاد کرلیا تھا اور بی جے پی کو اقتدار سے دور رکھنے کے لئے ایک نئی پارٹی تشکیل دی تھی۔ یہ انضمام 1990 ء کے عشرہ میں جنتادل منتشر ہونے کے تقریباً 20 سال بعد عمل میں آیا تھا۔ سابق وزیراعظم نے کہاکہ وہ خوش نصیب ہیں کہ سماج وادی پارٹی کی تقاریب میں شرکت کا موقع ملا۔ جموں و کشمیر کی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے دیوے گوڑا نے کہاکہ ان کے دور حکومت میں ایک مرتبہ بھی وہاں پر امتناعی احکام نافذ نہیں کئے گئے لیکن اب جو صورتحال ہے سب پر عیاں ہے۔ یہ اُمید ظاہر کرتے ہوئے کہ اترپردیش میں سماج وادی پارٹی کامیاب ہوجائے گی۔ انھوں نے کہاکہ اترپردیش اسمبلی کے انتخابات ملک کا ایجنڈہ متعین کریں گے اور ملائم سنگھ کی قیادت میں سماج وادی پارٹی دوبارہ برسر اقتدار آجائے گی

اور میں جب 10 ماہ تک وزیراعظم تھا اُس وقت ملائم سنگھ یادو میرے وزیر دفاع تھے۔ دریں اثناء راشٹریہ جنتادل کے سربراہ لالو پرساد یادو نے آج کہا ہے کہ اترپردیش میں سماج وادی پارٹی کو مضبوط بنانے اور بی جے پی کو مار بھگانے کے لئے وہ یہاں آئے ہیں جیسا کہ بہار میں کیا گیا ہے۔ ایس پی کی سلور جوبلی تقاریب سے روانگی سے قبل انھوں نے بتایا کہ ہم یہاں سماج وادی پارٹی کو مستحکم کرنے آئے ہیں جیسا کہ بہار میں گیڈر مار بھگایا گیا اسی طرح اترپردیش میں بھی بی جے پی کا صفایا کردیا جائے گا۔ اس موقع پر سبق وزیراعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا سے اتحاد کے امکانات کے بارے میں دریافت کیا گیا تو انھوں نے بتایا کہ ہم اترپردیش کے سیاسی محاذ پر نہیں ہیں۔ ممکن ہے کہ اترپردیش، گجرات اور پنجاب اسمبلی کے انتخابات کے بعد حالات متقاضی ہوں۔ ہم صرف یہاں سماج وادی پارٹی کی سلور جوبلی تقاریب میں شرکت کے لئے آئے ہیں۔ جنتادل متحدہ کے لیڈر شرد یادو نے کہاکہ سماج وادی پارٹی سے قدیم تعلقات کی وجہ سے ہم یہاں تقریب میں شریک ہیں۔ انھوں نے کہاکہ فی الحال اتحاد کے بارے میں کوئی بات چیت نہیں کی گئی۔ ملائم سنگھ یادو ہی مناسب طریقہ سے بتا سکتے ہیں۔ چونکہ سماج وادی پارٹی یہاں پر سب سے بڑی پارٹی ہے اور اتحاد کے بارے میں فی الحال گفتگو کرنا مناسب نہیں رہے گا۔

TOPPOPULARRECENT