Saturday , September 23 2017
Home / Top Stories / ’’ فرقہ پرستی کے جنون کیلئے کوئی جگہ نہیں‘‘: مودی

’’ فرقہ پرستی کے جنون کیلئے کوئی جگہ نہیں‘‘: مودی

NEW DELHI, AUG 15 (UNI):- Prime Minister Narendra Modi addressing the Nation on the occasion of 69th Independence Day from the ramparts of Red Fort in New Delhi on Saturday. UNI PHOTO-7U

نئی دہلی۔15 اگست (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے یوم آزادی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان میں فرقہ پرستی کے جنون اور ذات پات کے زہر کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے۔ انہوں نے ملک کو بدعنوانی سے پاک کرنے کا عہد کیا، البتہ گزشتہ سال کی طرح اس سال انہوںنے کوئی بڑی اسکیم کا اعلان نہیں کیا۔ اپنی 85 منٹ کی تقریر میں لال قلعہ کی فصیل سے خطاب کرتے ہوئے بڑے مسائل جیسے ’’ون رینک ون پینشن‘‘ کا حوالہ دیا اور کہا کہ ان کی حکومت کو کئی مسائل کا سامنا ہے اور حکومت تمام مسائل کی یکسوئی کیلئے پابند عہد ہے۔ زردی مائل پگڑی پہن کر وزیراعظم کی جانب سے سب سے طویل یوم آزادی تقریر کرتے ہوئے نریندر مودی نے پارلیمنٹ میں ہونے والے ہنگاموں اور خلل کا کوئی حوالہ دینے سے گریز کیا۔ اس موضوع پر کل ہی صدرجمہوریہ پرنب مکرجی نے تشویش ظاہر کی تھی۔ مودی نے اپنی تقریر میں نشاندہی کی کہ گزشتہ سال انہوں نے اپنے پہلے یوم آزادی خطاب کے دوران جو اعلانات کئے تھے، جیسے سوچھ بھارت اور جن دھن اسکیم ان کے کامیاب نتائج برآمد ہوئے اور ماباقی اعلانات میں سے کئی ایک پر وقت ِمقررہ کے اندر عمل آوری ہوئی ہے جیسے بیت الخلاؤں کی تعمیر وغیرہ کا کام پورا ہوا ہے۔)

ملک کو بدعنوانی سے پاک کرنے کا عہد
لال قلعہ کی فصیل سے وزیراعظم مودی کا خطاب ، ہندوستان بھر میں یوم آزادی کا جوش و خروش

نئی دہلی۔15 اگست (سیاست ڈاٹ کام) وزیراعظم نریندر مودی نے یوم آزادی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ایسے کئی پروگرامس بنائے ہیں جن میں غریب اور دیگر پسماندہ طبقات کی بہبود پر توجہ دی گئی ہے۔ افراط زر میں کمی لانے اور پیداوار کو دگنا کرنے کی کوششیں جاری ہیں۔ ملک کے 125 کروڑ عوام کے سامنے ترقی کے لئے کی جارہی کوششوں پر اظہار خیال کرتے ہوئے نریندر مودی نے فرقہ وارانہ ہم آہنگی، بھائی چارہ اور امن کی پرزور حمایت کی اور کہا کہ ساری دنیا ہندوستان کے کثیرالوجود اور عظمت وقار کو سلام کرتی ہے۔ ہندوستان میں تمام مذاہب کے ماننے والوں کی کثیر تعداد موجود ہے۔ اس کے باوجود ملک مکمل طور پر متحد ہے۔ یہ عوامی اتحاد و بھائی چارہ ہی ہمارا سرمایہ ہے اور یہ صدیوں سے برقرار ہے۔

اس سرمایہ کو دل و جان سے عزیز رکھا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان میں ذات پات کے زہر اور فرقہ پرستی کے جنون کیلئے کوئی جگہ نہیں ہے اور اس کے بڑھاوے کی ہرگز اجازت نہیں دی جائے گی۔ اس لعنت کو ترقی کے ہتھیار سے ختم کردیا جائے گا۔ اگر ہندوستان کے اتحاد کو تباہ کردیا جائے تو پھر عوام کے خواب چکناچور ہوں گے۔ یہ ملک ترقی اور خوشحالی کی سمت بڑھ رہا ہے، اس کو مضبوط بنانا ہمارا کام ہے۔ نریندر مودی نے یوم آزادی کے موقع پر دوسرے سال کی اپنی تقریر میں بدعنوانی کے مسئلہ پر زیادہ توجہ دی اور زور دے کر کہا کہ گزشتہ 15 ماہ کے دوران ان کی حکومت کی جانب سے جو اقدامات کئے گے ہیں، اس کے بہتر نتائج برآمد ہورہے ہیں۔

کالے دھن کے مسئلہ سے نمٹنے کیلئے حکومت پر اپوزیشن کی جانب سے کی جارہی تنقیدوں کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بعض لوگ گمراہ کن بیانات دینے میں دلچسپی رکھتے ہیں۔ کسانوں کی بہبود کے لئے ادارہ جاتی کوششوں کی خاطر وزارت زراعت کا نیا نام ’’وزارتِ زراعت اور کسان‘‘ رکھنے کا اشارہ دیا۔ یہ فیصلہ خودکشی کے بڑھتے واقعات کے پس منظر میں کیا گیا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے اپنی نئی مہم اور پروگراموں کا اعلان کرتے ہوئے نوجوانوں کے اندر صنعت کاری کا حوصلہ بڑھانے کے لئے اسٹارٹ اَپ انڈیا، اسٹانڈ اَپ انڈیا کا اعلان کیا۔  اس دوران ملک گیر سطح پر آج حب الوطنی کا جوش و خروش دیکھا گیا جب کہ پورا ملک آزادی کی 69ویں سالگرہ منارہا تھا ۔ چیف منسٹرس نے ترقیاتی اقدامات کا اعلان کیا ۔ درپیش چیالنجس کے مقابلہ کا آغاز کیا اور عہد کیا کہ اپنی اپنی ریاست کو امن اور ترقی کے راستہ پر لے جانے کیلئے جدوجہد کریں گے ۔ ترنگا لہرانے کے ساتھ تقاریب کا آغاز ہوا ۔ رنگا رنگ پریڈ کے مناظر اور دیگر مقابلے ریاستی دارالحکومت میں دیکھے گئے ۔ یوم آزادی تقاریب پُرامن طور پر منعقد ہوئیں کیونکہ عہدیداروں نے وسیع پیمانے پر صیانتی انتظامات کئے تھے تاکہ دہشت گرد حملوں کے اندیشوں کا ازالہ کیا جاسکے ۔ عوام نے ماؤسٹوں کی جانب سے یوم آزادی تقاریب کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کو نظرانداز کردیا ۔

TOPPOPULARRECENT