Tuesday , October 24 2017
Home / ہندوستان / فضائیہ کے ارکان مذہبی بنیادوں پر داڑھی نہیں رکھ سکتے : سپریم کورٹ

فضائیہ کے ارکان مذہبی بنیادوں پر داڑھی نہیں رکھ سکتے : سپریم کورٹ

نئی دہلی 15 ڈسمبر (سیاست ڈاٹ کام) ہندوستانی فضائیہ کے ارکان مذہبی بنیادوں پر داڑھی نہیں رکھ سکتے۔ سپریم کورٹ نے آج یہ بات کہی اور یہ واضح کیاکہ شخصی اظہار کی پالیسیوں کا مقصد کسی مذہبی عقیدے کے خلاف امتیاز برتنا نہیں ہے بلکہ یکسانیت اور ڈسپلن کو یقینی بنانا ہے جو ہر مسلح فورس کا جزلاینفک ہے۔ چیف جسٹس ٹی ایس ٹھاکر کی زیرقیادت بنچ نے انڈین ایرفورس (آئی اے ایف) کے دو مسلم ارکان عملہ کی اپیل مسترد کردی۔ ایرمین محمد زبیر اور انصاری آفتاب احمد نے پنجاب اور ہریانہ ہائیکورٹ کی جانب سے اُن کی درخواست مسترد کئے جانے کو چیلنج کیا تھا جس میں اُنھوں نے ایرفورس کے اِس حکمنامے کو کالعدم قرار دینے کی خواہش کی تھی جس میں اُنھیں داڑھی منڈھوانے کی ہدایت دی گئی تھی۔ سپریم کورٹ نے یہ احساس ظاہر کیاکہ ایک بڑی مسلح فورس کی مؤثر کارکردگی کے لئے تمام ارکان کو ایک طاقت کی حیثیت سے متحد ہونا چاہئے۔ اِس معاملہ میں ذات پات، نسل، رنگ یا مذہب کا کوئی امتیاز نہیں برتا جانا چاہئے۔ اِسی طرح ڈیوٹی پر انڈین ایر فورس کے ہر رکن کو ضروری ہے کہ یونیفارم پہنے اور ایسی کوئی علامت کا اظہار نہ کرے جو اُسے دوسروں سے ممتاز کرتی ہے۔

TOPPOPULARRECENT