Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / فلاحی اسکیمات کے سبب پرانے شہر میں ٹی آر ایس کا موقف مستحکم

فلاحی اسکیمات کے سبب پرانے شہر میں ٹی آر ایس کا موقف مستحکم

حیدرآباد۔/22ڈسمبر، ( سیاست نیوز) ٹی آر ایس حکومت کی مختلف فلاحی اسکیمات کے نتیجہ میں پارٹی کو شہر حیدرآباد اور خاص طور پر پرانے شہر کے علاقہ میں قدم جمانے کا موقع ملا ہے۔ پرانے شہر کے علاقوں میں ٹی آر ایس سے وابستہ قائدین نے اس بات کا اعتراف کیا کہ گزشتہ ایک سال کے دوران پرانے شہر میں پارٹی کی مقبولیت میں نہ صرف اضافہ ہوا ہے بلکہ عوام حکومت کے اقدامات پر مسرت کا اظہار کررہے ہیں۔ غریبوں کیلئے وظائف، شادی مبارک اور کلیان لکشمی اسکیم، اوورسیز اسکالر شپ اسکیم، ڈبل بیڈ روم مکانات کی تعمیر، غریبوں کو آٹو رکشاء کی فراہمی اور دیگر اسکیمات کا عوام میں مثبت اثر دیکھا جارہا ہے۔ ٹی آر ایس حکومت نے شہر میں 418کروڑ روپئے کے برقی اور آبرسانی کے بقایا جات معاف کرنے کا فیصلہ کیا جس سے پرانے شہر کے کئی لاکھ غریب خاندانوں کو فائدہ ہوگا۔ حکومت نے اگرچہ اس اسکیم کی تفصیلات کا اعلان نہیں کیا تاہم غریب خاندان اس  اسکیم سے کافی خوش ہیں اور انہیں یقین ہے کہ اسکیم پر عمل آوری کے ذریعہ وہ برقی اور آبرسانی کے بلز سے نجات حاصل کرلیں گے۔ حکومت نے شہر میں برقی کے 128کروڑ اور آبرسانی کے 290کروڑ کے بقایا جات معاف کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ بہت جلد اس کے رہنمایانہ خطوط جاری کئے جائیں گے۔ شہر سے تعلق رکھنے والے پارٹی قائدین کا ماننا ہے کہ ٹی آر ایس نے غریبوں اور متوسط خاندانوں کی بھلائی پر جس اندازمیں توجہ مرکوز کی ہے سابق میں کسی حکومت نے اس طرح کی دلچسپی نہیں دکھائی جس کے نتیجہ میں شہر میں ٹی آر ایس کا موقف مضبوط ہوا ہے۔ اسی دوران ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمود علی نے دعویٰ کیا کہ حکومت کی کارکردگی کی بنیاد پر گریٹر حیدرآباد کے انتخابات میں ٹی آر ایس اکثریت حاصل کرلے گی اور میئر و ڈپٹی میئر کے عہدوں پر ٹی آر ایس کا قبضہ رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد کی ترقی پر چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے خصوصی توجہ مرکوز کی ہے اور غریب خاندانوں کے ہر فرد کو 6کیلو چاول کی فراہمی کا تاریخ ساز فیصلہ کیا گیا جبکہ سابق میں ہر خاندان کیلئے صرف 20کیلو چاول کی حد مقرر کی گئی تھی۔ اس کے علاوہ لاکھوں غریب بیوہ خواتین کو ماہانہ ایک ہزار روپئے اور معذورین کو دیڑھ ہزار روپئے وظیفہ دیا جارہا ہے۔ محمود علی نے کہا کہ شادی مبارک اور کلیان لکشمی اسکیم نے غریب خاندانوں کی لڑکیوں کی شادی کا بوجھ کافی حد تک کم کردیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیف منسٹر پرانے شہر کیلئے مزید نئی اسکیمات کا منصوبہ رکھتے ہیں اور گریٹر انتخابات کے بعد ان کا اعلان کیا جائے گا۔ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ پرانے شہر میں نہ صرف اقلیتیں بلکہ تمام طبقات حکومت کی کارکردگی سے مطمئن ہیں اور عوام نے گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کی تائید کا تہیہ کرلیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ صرف کارکردگی کی بنیاد پر ہی ٹی آر ایس کامیاب ہوگی اور گزشتہ 14برسوں کے دوران سرگرم کارکنوں کو ٹکٹ دیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT