Friday , April 28 2017
Home / شہر کی خبریں / فلاحی کاموں میں تلنگانہ کو ’ نمبر ون ریاست ‘ کا درجہ

فلاحی کاموں میں تلنگانہ کو ’ نمبر ون ریاست ‘ کا درجہ

حکومت وعدہ کے مطابق ایک لاکھ جائیدادوں پر تقررات مکمل کرے گی ، ہریش راؤ کا بیان
حیدرآباد۔ 14 فروری (سیاست نیوز) وزیر آبپاشی ہریش راؤ نے کہا کہ حکومت وعدہ کے مطابق ایک لاکھ جائیدادوں پر تقررات کو مکمل کرے گی۔ اس کے علاوہ خانگی شعبہ میں لاکھوں نوجوانوں کیلئے روزگار کے مواقع فراہم کئے جائیں گے۔ انہوں نے افسوس کا اظہار کیا کہ بعض عناصر بیروزگار نوجوانوں کو مشتعل کرتے ہوئے سیاسی فائدہ حاصل کرنے کی کوشش کررہی ہیں۔ ہریش راؤ نے کہا کہ اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے حکومت کے خلاف مہم کامیاب نہیں ہوگی اور ان سرگرمیوں سے ترقیاتی اور فلاحی اسکیمات کی رفتار ہرگز سست نہیں پڑ سکتی ہے۔ تمام طبقات کی ترقی اور بھلائی حکومت کا واحد ایجنڈہ ہے۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ آندھرائی حکمرانوں نے تلنگانہ کی ترقی کو نظرانداز کردیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت نے گزشتہ دو برسوں میں تلنگانہ کے لئے کئی اہم پراجیکٹس کا آغاز کیا ہے۔ ہریش راؤ آج تلنگانہ بھون میں محبوب نگر سے تعلق رکھنے والی میونسپل چیرپرسن شریمتی رادھا امر کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ شریمتی رادھا نے کانگریس پارٹی سے استعفیٰ دے کر ٹی آر ایس میں اپنے حامیوں کے ساتھ شمولیت اختیار کرلی ہے۔ ہریش راؤ نے کہا کہ ترقیاتی اور فلاحی اقدامات کے سلسلے میں تلنگانہ کو ملک کی ’’نمبر ون ریاست‘‘ کا مقام حاصل ہے۔ مختلف ریاستوں نے تلنگانہ کی اسکیمات کی تفصیلات حاصل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ کانگریس اور تلگو دیشم دور حکومت میں ضلع محبوب نگر کو نظرانداز کردیا گیا تھا۔ چندرا بابو نائیڈو نے اس ضلع کو گود لیا تھا لیکن اپنے 9 سالہ دور حکومت میں ترقی پر کوئی توجہ نہیں دی۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے رکن پارلیمنٹ جیتندر ریڈی ضلع کے لئے فلک نما تا محبوب نگر ڈبل ریلوے لائن کی منظوری حاصل کی۔ اس کے علاوہ ترقیاتی اسکیمات کیلئے 1200 کروڑ روپئے کی منظوری حاصل کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ ضلع محبوب نگر کے نام کے ساتھ ہی نقل مقام کا تذکرہ آتا ہے۔ ہزاروں افراد روزگار کی تلاش میں دیگر مقامات کا رُخ کرچکے ہیں۔ ٹی آر ایس حکومت نے محبوب نگر کو ترقی کی راہ پر گامزن کیا ہے اور آبپاشی پراجیکٹس کو جنگی خطوط پر مکمل کرتے ہوئے 5.5 لاکھ ایکر اراضی کو پانی سیراب کیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ چندرا بابو نائیڈو ، وائی ایس راج شیکھر ریڈی، کے روشیا اور کرن کمار ریڈی نے محبوب نگر کیلئے کئی وعدے کئے لیکن ضلع کو پانی سربراہ نہیں کیا گیا۔ ہریش راؤ نے حکومت کی مختلف فلاحی اسکیمات کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ کلیان لکشمی، شادی مبارک، پنشن اور دیگر اسکیمات کے ذریعہ لاکھوں خاندانوں کو فائدہ پہنچایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری ملازمین کے حق میں حکومت نے کئی اقدامات کئے۔ سرکاری محکمہ کی مخلوعہ نشستوں کو پُر کرنے کیلئے بڑے پیمانے پر تقررات کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری اور آئی ٹی شعبہ کی ترقی کیلئے چیف منسٹر کے سی آر اور کے ٹی آر کی مساعی قابل تحسین ہے۔ وزیر صحت لکشما ریڈی نے میونسپل چیرپرسن کی ٹی آر ایس میں شمولیت کا خیرمقدم کیا اور کہا کہ اس سے ضلع کی مزید ترقی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ حکومت محبوب نگر ضلع کی ترقی کیلئے کئی پراجیکٹس کا آغاز کرچکی ہے۔ رکن پارلیمنٹ جیتندر ریڈی، رکن اسمبلی سرینواس گوڑ اور دوسروں نے مخاطب کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT