Monday , May 22 2017
Home / Top Stories / فلسطینیوں کے یوم نکبہ کے دوران اسرائیلی فوج سے جھڑپیں

فلسطینیوں کے یوم نکبہ کے دوران اسرائیلی فوج سے جھڑپیں

غزہ کے ماہی گیروں کو اسرائیلی بحریہ نے گولی مار کر ہلاک کردیا، احکام کی خلاف ورزی کا الزام

رملہ 15 مئی (سیاست ڈاٹ کام) 1948 ء میں اسرائیل کے قیام کے دوران بے گھر ہوجانے والے فلسطینیوں کی یوم نکبہ کے موقع پر جلوس نکالنے کی کوشش کے دوران مقبوضہ مغربی کنارے میں اسرائیلی فوج کے ساتھ جھڑپوں کا آغاز کیا گیا۔ رملہ کے مضافات میں کئی فلسطینی نوجوانوں نے اسرائیلی فوجیوں پر سنگباری کی جس کے جواب میں اسرائیلی فوج نے ربر کی گولیاں داغیں اور فسادات پر قابو پانے کا بدبودار اسپرے اُن پر استعمال کیا۔ فلسطینی ہنگامی کارکن نے کہاکہ 11 فلسطینی ربر کی گولیوں سے زخمی ہوجانے کی وجہ سے ہسپتال میں شریک کردیئے گئے۔ تاہم ربر کی گولیوں سے زخمی ہوجانے والے فلسطینیوں کی درست تعداد معلوم نہیں ہوسکی۔ فلسطینیوں نے شہر کی سڑکوں پر جلوس نکالا تھا۔ وہ وسیع و عریض کنجیاں اُٹھائے ہوئے تھے جو اِس بات کی علامت تھی کہ وہ لوگ 1948 ء میں اپنے کھوئے ہوئے مکانوں کو واپس حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ یوم نکبہ تباہی کی یادگار کے دن کے طور پر منایا جاتا ہے کیوں کہ اُس دن فلسطینیوں کو اپنے گھروں اور اپنی سرزمین سے محروم ہونا پڑا تھا۔ بیت اللحم میں سینکڑوں فلسطینیوں نے اسرائیلی فوجیوں پر سنگباری کی جو بائبل کی افسانوی شخصیت راشیل کے مقبرے کی حفاظت کررہے تھے۔ راشیل کے مقبرے کا یہودی اور مسلمان مساوی طور پر احترام کرتے ہیں۔ فوجیوں نے فلسطینیوں کے جلوس پر آنسو گیس اور بے حس کردینے والے بم استعمال کئے لیکن فوری طور پر ہلاک ہوجانے والے فلسطینیوں کی تعداد معلوم نہیں ہو سکی۔ 1948 ء کو 15 مئی کے دن اسرائیل قائم کیا گیا تھا اور 7 لاکھ 60 ہزار فلسطینیوں کو اپنے گھروں اور اراضی سے محروم ہونا پڑا تھا۔ فلسطینی اپنے گھروں کو واپسی کے حق کا مطالبہ کرتے ہوئے آج کا دن مناتے ہیں۔ جاریہ سال اسرائیلی جیلوں میں مروان برغوتی کی زیرقیادت فلسطینی قیدیوں کی بھوک ہڑتال کے پس منظر میں یوم نکبہ منایا جارہا ہے۔ پی ایل او کے قائد نے اپنی قید تنہائی کے کمرے سے ایک بیان جاری کیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ آج اِس کے روزہ کے 29 واں دن ہے اور وہ غیر معینہ مدت کی بھوک ہڑتال کررہا ہے۔ اُس نے فلسطینیوں سے اپیل کی کہ آزادی اور وقار کی جنگ اپنے مقصد کے حصول تک جاری رکھیں۔ دریں اثناء غزہ سٹی سے موجودہ اطلاع کے بموجب اسرائیلی طلایہ گرد کشتی نے فلسطینیوں ماہی گیروں پر ناکہ بندی کی خلاف ورزی کا الزام عائد کرتے ہوئے اُن پر فائرنگ کی۔ 10 سال کی ناکہ بندی کے دوران اسرائیل اور غزہ کے حکمران حماس کے درمیان 3 جنگیں ہوچکی ہیں۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT