Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / فلسطینی اتھارٹی کے خاتمے کا خواب بھی نہ دیکھیں: محمود عباس

فلسطینی اتھارٹی کے خاتمے کا خواب بھی نہ دیکھیں: محمود عباس

بیت اللحم ۔ 7 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) فلسطینی صدر محمود عباس نے اپنے زیر قیادت اتھارٹی کے خاتمے سے متعلق افواہوں کو مسترد کردیا اور کہا ہے کہ وہ اس سے کبھی دستبردار نہیں ہوں گے۔ ان کا کہنا ہے کہ میں نے گذشتہ چند روز کے دوران فلسطینی اتھارٹی اور اس کی تخریب وانہدام سے متعلق بہت باتیں سنی ہیں۔یہ اتھارٹی ہماری کامیابی ہے اور ہم اس سے کبھی دستبردار نہیں ہوں گے۔ انھوں نے بیت اللحم میں کرسمس کے موقع پر ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ فلسطینی اتھارٹی کے انہدام کا خواب بھی نہ دیکھیں۔واضح رہے کہ بعض قدامت پسند چرچ 7 جنوری کو کرسمس منا رہے ہیں۔وہ باقی عیسائیوں کے ساتھ 25 دسمبر کو حضرت عیسیٰ علیہ السلام کا یوم پیدائش نہیں مناتے ہیں۔ صدر محمود عباس نے فلسطینی اتھارٹی کے خاتمے کے بعد کی صورتحال کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ اتھارٹی موجود ہے،اس کے بعد فلسطینی ریاست معرض وجود میں آئے گی،کسی کے پاس کوئی اور منظرنامہ نہیں ہے اور نہ ہم کسی اور کا پیش کردہ کوئی منظرنامہ قبول کریں گے 80 سالہ محمود عباس نے گذشتہ ہفتے اپنی خرابیِ صحت سے متعلق پھیلنے والی افواہ کے بعد پہلی مرتبہ یہ بیان جاری کیا ہے۔گذشتہ ہفتہ بعض حلقوں کی جانب سے یہ افواہ اڑائی گئی تھی کہ ان کی صحت خراب ہے جس کے پیش نظر فلسطینی اتھارٹی ختم ہوسکتی ہے لیکن فلسطینی اتھارٹی نے اس افواہ کو یکسر مسترد کردیا ہے۔ فلسطینی صدر نے دریائے اردن کے مغربی کنارے میں گذشتہ تین ماہ سے جاری تشدد کے واقعات کے بعد پہلی مرتبہ کسی عوامی مجلس سے خطاب کیاہے اور وہ بظاہر بہتر نظر آرہے تھے۔اسرائیل کے ہتھکنڈوں کے نتیجے میں ہر طرف سے مایوس فلسطینی نوجوان یہودیوں اور اسرائیلی سکیورٹی فورسز پر چاقو حملے کررہے ہیں۔اسرائیلی حکام ان چاقو حملوں کا فلسطینی اتھارٹی کو ذمے دار ٹھہرارہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT