Sunday , August 20 2017
Home / دنیا / فلسطینی عمارتوں کا خطرناک رفتار سے اسرائیلی انہدام

فلسطینی عمارتوں کا خطرناک رفتار سے اسرائیلی انہدام

121 عمارتیں مکمل طو رپر یا جزوی طور پر منہدم ، اقوام متحدہ کی رپورٹ
یروشلم ۔ 8 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اسرائیل فلسطینیوں کے مکانات اور دیگر عمارتوں کو جو بین الاقوامی امداد سے تعمیر کئے گئے ہیں، خطرناک رفتار کے ساتھ منہدم کررہا ہے۔ اقوام متحدہ نے کہا کہ تاحال جاریہ سال اور 2015ء میں جملہ 121 عمارتیں یا تو جزوی یا مکمل طور پر منہدم کردی گئی ہیں، مقبوضہ مغربی کنارہ میں یہ عمارتیں بین الاقوامی عطیہ دہندگان کی مدد سے تعمیر کی گئی تھی۔ اقوام متحدہ کے اعداد و شمار کے بموجب انہدام کے پراجکٹس میں فلسطینیوں کے مکانات اور کم از کم ایک اسکول شامل ہیں۔ علاوہ ازیں ایک عارضی عمارت جو مویشیوں کا باڑہ تھی، منہدم کردی گئی ہے۔ پہلے ہی 2015ء میں اور 2016ء کے پہلے 10 ہفتوں میں انسانی  بنیاد پر امدادی اشیاء سے تعمیر کی ہوئی فلسطینی عمارتوں کے منہدم کئے جانے کی تعداد اندازہ کے مطابق تعداد سے زیادہ ہوچکی ہے۔ سفارتی برادری نے اسرائیلی عہدیداروں سے اس کارروائی کے خلاف احتجاج کا فیصلہ کیا ہے۔ اسرائیلی وزارت دفاع کی ایک کمیٹی حکومت کی پالیسیوں پر فلسطینی علاقوں میں عمل آوری کی ذمہ دار ہے۔ اس نے انہدام کی ان اطلاعات پر کوئی تبصرہ کرنے سے انکار کردیا۔ تاہم کہا کہ غالباً یہ ناجائز قبضہ کی ہوئی زمین پر تعمیر شدہ عمارتیں تھیں یاپھر غیرقانونی طور پر تعمیر کی گئی تھیں۔

TOPPOPULARRECENT