Thursday , August 17 2017
Home / شہر کی خبریں / فلسطینی عوام پر ظلم و زیادتی ،ہندوستان کی خاموشی معنیٰ خیز

فلسطینی عوام پر ظلم و زیادتی ،ہندوستان کی خاموشی معنیٰ خیز

جلسہ یوم اظہاریگانگت فلسطین سے جناب رحمن خان، مولانا اسرارالحق اور دیگر شخصیتوں کا خطاب
حیدرآباد۔5ڈسمبر(سیاست نیوز) انڈو عرب فرینڈ شپ فاونڈیشن کے زیر اہتمام یوم اظہار یگانگت برائے فلسطین کا شاندار پیمانے پر رویندرا بھارتی میںانعقا دعمل میںآیا۔ ریاستی وزیرداخلہ و چیرمین انڈوعرب فرینڈ شپ فاونڈیشن استقبالیہ کمیٹی این نرسمہا ریڈی کی نگرانی میںمنعقدہ اس تقریب میں سابق مرکزی وزیر چیف پیٹرن فاونڈیشن جناب رحمن خان ‘ڈپٹی چیف منسٹر تلنگانہ ریاست الحاج محمد محمو دعلی ‘ رکن پارلیمنٹ کشن گنج بہار مولانا اسرار لحق ‘ سفیر برائے ایران جناب حسن نوریان‘فلسطین کے سفیر جناب عدنان ا ے عبداللہ ‘ سوڈان کے سفیر ڈاکٹر حسن اع الطالب‘ صدر عرب لیگ مشن ڈاکٹر موذان عبداللہ عباس یاعف مسعودی‘ سفیر یمن جناب جمال عبداللہ ‘ صدر عرب لیگ مشن برائے عراق جناب محمد صابری راشد‘ جناب خلیفہ لیبیا‘جناب محمد محمود سومالیہ‘جناب خالد مکی سعودی عرب‘جناب محمد حسن محمو دال جوراین‘ رکن قانون ساز کونسل محمد علی شبیر‘ جارڈن‘قونصلیٹ جنرل ترکی جناب اردا ولو طاس‘ عتیق صدیقی کے لئے دیگر خلیجی ممالک کے سرکردہ شخصیتوں نے اس پروگرام میں شرکت کے ذریعہ فلسطینی عوام سے اظہا ریگانگت پیش کیا۔ جناب جابر پٹیل صدر آئی اے ایف ایف نے تقریب کی کارروائی چلائی۔ سابق مرکزی وزیر جناب رحمن خان نے اس موقع پر خطاب کے دوران یونائٹیڈ نیشنس کو فلسطین کے ساتھ انصاف میںپوری طرح ناکام قراردیا۔ انہوں نے فلسطینی عوام پر جاری مظالم کی روک تھام کے لئے موثر اقدامات کرنے کے بجائے امریکی اور صیہونی دبائو کے تحت کام کرنے کا بھی یو این کو ذمہ دار ٹھہرایا۔جناب رحمن خان نے کہاکہ شرمندگی سے بچنے کے لئے یواین نے بین الاقوامی سطح پر یوم اظہار یگانگت برائے فلسطین کا اعلان کیا ہے جبکہ یواین کی قرارد اد کے ذریعہ عراق پر حملوں کا فیصلہ کیا جاسکتا ہے تو کیا اسرائیل کی بربریت سے فلسطینی عوام کوبچانے کے لئے ایک اور قرارداد یواین پیش نہیںکرسکتا ۔جناب رحمن خان نے کہاکہ یو این مغربی ممالک کی ایماء پر کام کرنے والا ادارہ ہے اور یہی وجہ ہے اسرائیلی بربریت کے خلاف یواین مغربی دبائو کی وجہ سے کوئی کارروائی نہیں کرسکتا۔ جنا ب رحمن خان نے کہاکہ دنیا کے 136ممالک نے فلسطین کو ڈپلومیٹ موقف فراہم کرنے کی تائید کی ہے سوائے امریکہ اور مغربی ممالک کے مگر مغربی ممالک کے اس متعصبانہ رویہ کے خلاف کسی قسم کی توجہ نہیں دی جارہی ہے۔رحمن خان نے مشرق وسطیٰ کو میدان جنگ میںتبدیل کردینے کا امریکہ اور مغربی ممالک پر الزام بھی عائد کیا او رکہاکہ فلسطینی عوام کیلئے تڑپتا دل رکھنے والے مشرق وسطیٰ کے ممالک آج خود اپنے تحفظ کے مسئلہ کولیکر حیران وپریشان ہیں۔ انہوں نے اتحاد کو وقت کی اہم ضرورت قراردیتے ہوئے کہاکہ مشرق وسطیٰ کی تمام مملکتوں کو متحد ہوکر مغربی او ر صیہونی سازشوں سے مقابلہ کرنے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے آئی اے ایف ایف انتظامیہ کو دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہاکہ ہندوستان ایک ایسا ملک ہے جو فلسطین کے ساتھ ہر وقت شانہ بہ شانہ کھڑا ہوا ہے مگر پچھلے کچھ سالوں سے فلسطینی عوام پر ڈھائے جانے والے مظالم پر ہندوستان کی خاموشی معنیٰ خیز بھی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ ان حالات میں یوم اظہا ریگانگت برائے فلسطین منعقد کرتے ہوئے ہندوستان او رفلسطینی عوام کے درمیان رشتوں کو مزید استحکام پہنچانے کاکام کیا ہے۔ جناب محمد محمودعلی نے کہاکہ دوسری جنگ آزادی کے بعد یہودیوں کو فلسطین کی سرزمین پر لاکر بسانا خود ایک بین الاقوامی سیاست کاحصہ تھا۔جناب محمدمحمو دعلی نے کہاکہ فلسطین کی سرزمین مسلمانوں کے لئے روز اول سے ہی مقدس او رمتبرک رہی ہے ۔ انہو ںنے کہاکہ مکہ مکرمہ کے تعین سے قبل مسلمانوں کا قبلہ اول بیت المقدس ہی تھاجس کی حفاظت کے لئے مسلمانو ںنے اپنی جانوں کی قربانی دی ہے۔ جناب محمد محمودعلی نے مزیدکہاکہ مگر آج فلسطینی عوام اسرائیلی سازشوں کا شکار بنی ہوئی ہے ۔انہوں نے مسلکی جھگڑوں میںالجھاکر مسلمان قوم کو ایک دوسرے کے دست گریباں کرنے کا بھی بیرونی طاقتوں پر الزام عائد کیا ۔ انہوں نے کہاکہ فلسطینی عوام کے ساتھ اظہار یگانگت ہندوستان کا اولین فریضہ ہے ۔ چیرمن استقبالیہ کمیٹی این نرسمہا ریڈی نے مہمان خصوصی او رتمام بیرونی مندوبین کی تقریب میںآمد او رشرکت پر دل کی گہرائیوں سے مبارکباد پیش کی ۔ انہوں نے بھی انڈو فلسطین دوستی کو ہندوستان کی قدیم روایت قراردیا اورکہاکہ فلسطین کے ساتھ کسی بھی قسم کی ناانصافی ہمارے لئے ناقابلِ فراموش اقدام ہوگا۔ منتظمین کی جانب سے جناب رحمن خان‘ ڈپٹی چیف منسٹر محمد محمو دعلی او ردیگر مہمانوں کو تہنیت بھی پیش کی گئی۔

TOPPOPULARRECENT