Tuesday , August 22 2017
Home / ہندوستان / فلسطین کو تبدیل شدہ مواصلاتی آلات کی فراہمی کا فیصلہ

فلسطین کو تبدیل شدہ مواصلاتی آلات کی فراہمی کا فیصلہ

اسرائیل کی جانب سے صدر مکرجی کے تحفہ کو روکنے کے بعد نیا اقدام
نئی دہلی ۔ 13 اکٹوبر۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) ہندوستان نے آج کہا کہ صدرجمہوریہ پرنب مکرجی کی طرف سے فلسطین یونیورسٹی کو بطور تحفہ دیئے جانے والے ان مواصلاتی آلات کے بجائے اب دوسرے آلات فراہم کئے جائیں گے جنھیں اسرائیل نے سکیورٹی وجوہات کی بناء پر فلسطین پہونچانے سے روک دیا تھا ۔ وزارت اُمور خارجہ میں ترجمان وکاس سواروپ نے کہاکہ ’’چار مواصلاتی آلات جو مخصوص فریکوینسی کے حامل ہیں انھیں اسرائیل نے اپنے سکیورٹی ضوابط کے تحت فلسطین پہونچانے سے روک دیا تھا کیونکہ اسرائیلی سکیورٹی ضابطوں کے مطابق فلسطین میں ایسے آلات کے داخلے کی اجازت نہیں ہے ۔ چنانچہ ہم دوسری فریکوئینسی کے حامل دیگر مواصلاتی آلات فراہم کریں گے ‘‘۔ ان آلات کی فلسطین کو منتقلی کی اجازت دینے سے اسرائیلی حکام کی جانب سے روک دیئے جانے کے بعد صدرجمہوریہ پرنب مکرجی کے تاریخی دورے اسرائیل کے موقع پر بدمزگی پیدا ہوئی ہے ۔ واضح رہے کہ صدر پرنب مکرجی گزشتہ روز راملہ کی القدس یونیورسٹی کے ہند ۔ فلسطین مرکز برائے مہارت اطلاعات و مواصلات کو بطور تحفہ یہ مواصلاتی آلات پیش کرنا چاہتے تھے لیکن اسرائیل نے یہ کہتے ہوئے ان آلات کی منتقلی کو روک دیا تھا کہ سکیورٹی ضابطوں کے تحت اس قسم کے آلات کا فلسطینی علاقہ میں داخلہ ممنوع ہے ۔ اسلام کے تیسرے مقدس ترین مقام مسجد الاقصیٰ میں فلسطینیوں کے داخلہ پر اسرائیلی امتناع کے بعد القدس یونیورسٹی میں فلسطینی طلبہ اور اسرائیلی فورسیس میں تصادم کے کئی واقعات پیش آئے تھے ۔

TOPPOPULARRECENT