Monday , September 25 2017
Home / دنیا / فلپائنی فوج پر مسلم عسکریت پسندوں کا حملہ 20 حملہ آور اور تین فوجی ہلاک

فلپائنی فوج پر مسلم عسکریت پسندوں کا حملہ 20 حملہ آور اور تین فوجی ہلاک

منیلا ۔ 23 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مسلم عسکریت پسندوں نے جنوبی فلپائن میں فوج کے ایک کیمپ پر حملہ کیا۔ تین دن قبل جھڑپیں ہوئی تھیں جن میں تین فوجی اور 20 حملہ آور ہلاک ہوگئے تھے۔ فوج کے آج کے بیان کے مطابق لڑائی کا آغاز رات دیر گئے ہوا جب تقریباً 40 عسکریت پسند جن کا ایک غیرمعروف گروپ سے تعلق تھا۔ فلپائن کے صوبہ لیناؤ ڈیل سور کے قصبہ لوٹیو بوٹیق میں فوجی کیمپ پر حملہ آور ہوئے تھے۔ مزید 40 عسکریت پسند کل سابق حملہ آور عسکریت پسندوں کے ساتھ شامل ہوگئے جس کی وجہ سے فوج کی مزید جمعیت اور بمبار طیاروں و ہیلی کاپٹرس کے علاوہ توپ خانہ کو تعینات کردیا گیا۔ فوج کے ترجمان بریگیڈیئر جنرل ریسٹی ٹیوٹا پاڈیلا نے کہا کہ مقامی شہری محفوظ مقام کیلئے فرار ہوگئے۔ ان کو اندیشہ تھا کہ رہائشی علاقوں میں جھڑپیں شروع ہوجائیں گی۔ غالب مسلم آبادی والا صوبہ لیناوڈیل سور تقریباً 840 کیلو میٹر کے فاصلہ پر واقع ہے۔ کل جنگ میں نرمی پیدا ہوئی لیکن عسکریت پسندوں نے قریبی قصبہ ٹوگایا پر فائرنگ کی جس کی وجہ سے ایک فوجی ہلاک ہوگیا۔ اہم مسلم باغی گروپ مورواسلامک لبریشن فرنٹ کا ایک وسیع کیمپ بولیر میں قائم ہے لیکن شورش پسندوں نے حکومت کے ساتھ 2014ء میں ایک امن معاہدہ کیا ہے اور کسی بھی جھڑپ میں ملوث نہیں ہورہے ہیں۔ فلپائن میں مسلم باغی گروپ کے ساتھ ایک طویل مدت سے فوج اور باغیوں کی جھڑپیں جاری تھیں جن کی وجہ سے حکومت کو کافی پریشانی تھی۔ 2014 ء میں مسلم شورش پسندوں سے حکومت نے امن معاہدہ کرلیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT