Wednesday , May 24 2017
Home / ہندوستان / فوجی قافلہ پر حزب المجاہدین کا گھات لگا کر حملہ، تین فوجی ہلاک

فوجی قافلہ پر حزب المجاہدین کا گھات لگا کر حملہ، تین فوجی ہلاک

عسکریت پسندی میں ہلاکتوں کی جملہ تعداد 9 ہوگئی ، فائرنگ کے تبادلہ میں ایک خاتون بھی ہلاک
سرینگر ۔ 23 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) پاکستان حامی دہشت گرد تنظیم حزب المجاہدین کے عسکریت پسندوں نے ایک فوجی قافلہ پر گھات لگا کر حملہ کیا جس کے نتیجہ میں تین فوجی ہلاک اور دیگر پانچ زخمی ہوگئے جن میں دو عہدیدار بھی شامل ہے۔ فائرنگ کے تبادلہ میں ایک شہری بھی جان بھی ضائع ہوگئی۔ یہ واقعہ وادی کشمیر کے ضلع چوپیان کے دیہات گنگنو میں پیش آیا جو سرینگر کے 60 کیلو کے فاصلہ پر ہے۔ ذرائع کے بموجب فوجی قافلہ اپنے اڈہ پر واپس ہورہا تھا جبکہ محلہ مولو میں جو دیہات چترگرام میں واقع ہے، گھات لگا کر حملہ کیا۔ فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس میں تین فوجی لانس نائیک، غلام محی الدین راتھر متوطن بیچ بہرہ (جنوبی کشمیر)، نشانہ باز سری جیت ایم جے متوطن ضلع پالکڑ (کیرالا) اور سپاہی وکاس سنگھ گرجر متوطن راجستھان ہلاک ہوگئے۔ فائرنگ کے تبادلہ میں پھنس کر ایک خاتون کی جان بھی ضائع ہوئی۔ زخمی ہونے والوں میں دو فوجی عہدیدار لیفٹننٹ کرنل مکیش جھا اور میجر امردیپ سنگھ اور دیگر تین افراد شامل ہیں۔ میجر اور فوجی کی حالت نازک بتائی جاتی ہے۔ عسکریت پسند جانا بیگم کے ساتھ ایک انکاؤنٹر میں ایک خاتون ہلاک ہوگئی۔ حزب المجاہدین کے عسکریت پسندوں نے گھات لگا کر حملہ کرنے کی ذمہ داری قبول کرلی ہے۔ ٹیلیفون پر ایک شخص نے خود کو تنظیم کا ترجمان قرار دیتے ہوئے ایک مقامی خبر رساں ادارہ سے کہا کہ حملہ کی کارروائی حزب المجاہدین نے کی تھی۔ فوج کے 9 ارکان عملہ گذشتہ 15 دن کی عسکریت پسندی میں ہلاک ہوچکے ہیں۔ دو فوجی فبروری میں پانچ حزب المجاہدین کے عسکریت پسندوں کے حملہ میں 14 فبروری کو اور ایک انکاونٹر میں ایک میجر اور تین فوجی شمالی کشمیر کے ضلع کپواڑہ میں ہلاک ہوگئے تھے۔ شمالی کشمیر کے علاقہ بندی پورہ کے محلہ پارے کی ایک قیامگاہ سے عسکریت پسندوں نے فائرنگ بھی کی تھی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT