Thursday , September 21 2017
Home / کھیل کی خبریں / فیفا سکریٹری جنرل والکی غلط طرز عمل پر برطرف

فیفا سکریٹری جنرل والکی غلط طرز عمل پر برطرف

زیورخ ، 13 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) فیفا نے سکریٹری جنرل جیروم والکی کو برطرف کردیا ہے، جو غلط برتاؤ پر زیرتحقیقات ہیں، فٹبال کی ورلڈ گورننگ باڈی نے آج یہ بات کہی۔ صدر فیفا سپ بلاٹر جن پر آٹھ سالہ پابندی عائد کی گئی ہے، اُن کے سابق دست ِ راست جیروم پر 2014ء ورلڈ کپ کے ٹکٹس بلیک مارکیٹ میں فروخت کرنے کی اسکیم میں مدد دینے کا الزام ہے۔ فیفا کے بیان میں کہا گیا کہ فیفا ایمرجنسی کمیٹی نے 9 جنوری 2016ء کو فیصلہ کیا کہ جیروم والکی کو فیفا سکریٹری جنرل کے عہدہ سے فوری اثر کے ساتھ برطرف کیا جائے۔ بیان میں یہ بھی کہا گیا کہ فرانسیسی شخص جیروم کی فیفا کے ساتھ ملازمت ’’ختم‘‘ کردی گئی ہے۔ والکی 17 سپٹمبر کو معطل کئے گئے تھے جبکہ ضابطہ اخلاق کمیٹی نے ان الزامات کی انکوائری شروع کی کہ انھوں نے 2014ء ورلڈ کپ ٹکٹس کو کالا بازار میں فروخت کرنے میں مدد کی تھی۔ اس معطلی کی 6 جنوری کو تجدید کی گئی۔ انھیں جنوبی افریقہ کی جانب سے کرپشن کے داغ دار سابق کریبی فٹبال سربراہ جیک وارنر کو کی گئی 10 ملین ڈالر کی ادائیگی سے بھی جوڑا گیا ہے۔ امریکی تحقیقات کاروں کا مبینہ طور پر ماننا ہے کہ یہ ادائیگی 2010ء ورلڈ کپ کیلئے ووٹوں کے حصول کی خاطر رشوت رہی۔ مارکس کاٹنر اس ادارہ کے کارگزار سکریٹری جنرل ہیں جو موجودہ طور پر کئی محاذوں پر اسکینڈلوں کے خلاف جدوجہد کررہا ہے۔ امریکی حکام نے فٹبال کنٹراکٹس میں رشوت خوری پر 39 افراد بشمول سرکردہ فیفا ایگزیکٹیو ممبرز کے علاوہ دو کمپنیوں پر الزامات عائد کئے ہیں۔ بلاٹر سوئٹزرلینڈ میں مجرمانہ بدانتظامی کی پاداش میں فوجداری تحقیقات کا سامنا کررہے ہیں کہ ان کے صدارتی دور میں فیفا وائس پریسیڈنٹ مائیکل پلاٹینی کو دو ملین سوئس فرانکس (2 ملین ڈالر ؍ 1.8 ملین یورو) کی ادائیگی کی گئی۔ دونوں کو 8 سال کیلئے فٹبال سے دور کردیا گیا ہے۔سوئس پراسکیوٹرز روس اور قطر کو ترتیب وار 2018ء اور 2022ء کے ورلڈ کپ ٹورنمنٹس کے الاٹمنٹ کی بھی انکوائری کررہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT