Friday , September 22 2017
Home / ہندوستان / فیول قیمتوں کی وجہ سے افراط زر کی شرح میں اضافہ

فیول قیمتوں کی وجہ سے افراط زر کی شرح میں اضافہ

نئی دہلی 16 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) پٹرول اور ڈیزل کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کے نتیجہ میں ڈسمبر 2016 میں افراط زر کی شرح 3,39 فیصد رہی ہے جس کے نتیجہ میں کمی کا رجحان اور ترکاریوں کی قیمتوں میں کمی کا رجحان بھی رک گیا ہے ۔ اس کے علاوہ مینوفیکچر اشیا کی قیمتوں میں اضافہ بھی ہوا ہے ۔ اسی وجہ سے ریزرو بینک کی جانب سے 8 فبروری کو اپنے پالیسی نظر ثانی اعلان میں شرح سود میں کمی کا امکان نہیں ہے ۔ ہول سیل افراط زر کی شرح نومبر میں 3.15 فیصد رہی تھی جبکہ ڈسمبر 2015 میں یہ شرح منفی 1.06 فیصد ریکارڈ کی گئی تھی ۔ کہا گیا ہے کہ ڈیزل کی قیمت میں حالیہ دنوں میں جملہ 20.25 فیصد اور پٹرول کی قیمت میں 8.52 فیصد کا اضافہ کیا گیا ہے ۔ ماہ ڈسمبر میں بحیثیت مجموعی فیول اور برقی شعبہ کے افراط زر کی شرح 8.65 فیصد تک بڑھی ہے ۔ ماہ ڈسمبر کے دوران فیول اشیا کے علاوہ شکر ‘ آلو ‘ دالوں اور گیہوں کی قیمتوں میں بھی اضافہ درج کیا گیا ہے ۔ نومبرکے مہینے میں غذائی اجناس کے معاملہ میں افراط زر کی شرح منفی 0.70 فیصد تھی لیکن یہ ڈسمبر میں 1.54 فیصد تک پہونچ گئی ہے ۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ پٹرول اور ڈیزل پر افرا زر کے دباؤ کی وجہ عالمی مارکٹ میں خام تیل کی قیمتوں میں اضافہ ہے ۔

TOPPOPULARRECENT