Sunday , April 30 2017
Home / شہر کی خبریں / ف12 فیصد مسلم تحفظات کی ناراضگی دور کرنے کی کوشش

ف12 فیصد مسلم تحفظات کی ناراضگی دور کرنے کی کوشش

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کی الٹی گنتی کا آغاز ، وی ہنمنت راؤ
حیدرآباد ۔ 2 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : سکریٹری اے آئی سی سی و سابق رکن راجیہ سبھا وی ہنمنت راؤ نے کہا کہ وعدے کے مطابق 12 فیصد مسلم تحفظات کی عدم فراہمی پر مسلمانوں میں پائی جانے والی ناراضگی کو دورکرنے کے لیے عام کارپوریشن اور بورڈ میں مسلم قائدین کو نمائندگی دینے کا چیف منسٹر کے سی آر پر الزام عائد کیا اور کہا کہ حکومت کی الٹی گنتی شروع ہوچکی ہے ۔ ارکان اسمبلی کو پارٹی میں قائم رکھنے کے لیے انہیں بنگلے دئیے جارہے ہیں ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وی ہنمنت راؤ نے کہا کہ چیف منسٹر کے سی آر نے حکومت تشکیل دینے کے چار ماہ میں مسلمانوں کو 12 فیصد تحفظات فراہم کرنے کا وعدہ کیا تھا ۔ تقریبا 3 سال مکمل ہونے کے باوجود وعدہ پورا نہ ہونے پر مسلمانوں میں ٹی آر ایس حکومت کے خلاف بے چینی اور ناراضگی پائی جاتی ہے ۔ اس کو دور کرنے کے لیے 5 مسلم قائدین کو عام زمرے کے بورڈ اور کارپوریشنس کا صدر نشین نامزد کیا گیا ہے ۔ جو قابل ستائش اقدام ہے مگر اس سے مسلمانوں کی تعلیمی معاشی سماجی پسماندگی دور نہیں ہوگی بلکہ ان کی ترقی کے لیے ٹھوس اقدامات کرنے کی ضرورت ہے ۔ سماج کا کوئی بھی طبقہ حکومت کی کارکردگی سے مطمئن نہیں ہے ۔ ریاست کی جملہ آبادی میں بی سی طبقات کا 56 فیصد تناسب ہے ۔ منڈل کمیشن نے بی سی طبقات کو 27 فیصد تحفظات فراہم کرنے کی سفارش کی ہے ۔ تاہم 10 فیصد تحفظات پر بھی عمل نہیں ہورہا ہے ۔ بی سی طبقات کو گھوڑے پالنے ، مچھلیوں کی افزائش کرنے کے لیے فنڈز جاری کرنے کا اعلان کیا جارہا ہے ۔ تمام شعبوں میں بی سی طبقات کو نظر انداز کیا گیا ہے ۔ جس سے بی سی طبقات میں بھی حکومت کے خلاف ناراضگی پائی جاتی ہے ۔ ٹی آر ایس حکومت میں اختلافات پیدا ہوگئے ہیں ۔ ارکان اسمبلی چیف منسٹر کے سی آر سے ناراض ہیں کیوں کہ چیف منسٹر کسی بھی رکن اسمبلی سے ملاقات کرنا مناسب نہیں سمجھتے جس کی وجہ سے ارکان اسمبلی حکومت اور چیف منسٹر کے خلاف بغاوت کرنے کی تیاری کررہے ہیں جس کا جائزہ لینے کے بعد ہی چیف منسٹر نے تمام ارکان اسمبلی کو فی کس ایک کروڑ روپئے کے مصارف سے بنگلہ تعمیر کرنے کا اعلان کیا ہے ۔ جب کہ غریب عوام کو ڈبل بیڈ روم مکانات تعمیر کرنے کے وعدے کو ابھی تک پورا نہیں کیا گیا کسانوں کا قرض معاف نہیں کیا گیا ۔ طلبہ کی فیس ری ایمبرسمنٹ جاری نہیں کی گئی ۔ ہر محاذ پر ٹی آر ایس حکومت ناکام ہوگئی ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT