Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / قائدین اسکیمات پر تشہیر کے بجائے ذاتی شہرت کے خواہاں

قائدین اسکیمات پر تشہیر کے بجائے ذاتی شہرت کے خواہاں

عوام کیا چاہتے ہیں
قائدین اسکیمات پر تشہیر کے بجائے ذاتی شہرت کے خواہاں
جی ایچ ایم سی کو عوام میں شعور بیدار کرنے کی ضرورت
حیدرآباد ۔ 14 ستمبر ۔ ( سیاست نیوز ) حکومت کی جانب سے عوام کی ترقی اور فلاح و بہبود کیلئے اقدامات کے دعوے تو کئے جاتے ہیں اور جب کبھی حکومت کسی اسکیم کا اعلان کرتی ہے تو ایسی صورت میں منتخبہ عوامی نمائندے ان اسکیمات کو قابل عمل بنانے کے بجائے اس بات کا سہرا اپنے سر باندھنے کی کوشش کرتے ہیں کہ اس اسکیم کا آغاز ان کی مرہون منت ہے ۔ حکومت کی جانب سے چلائی جانے والی اسکیموں کے متعلق شعور بیداری کے ذریعہ عوام کو معاشی و تعلیمی طورپر مستحکم بنانے کے اقدامات کئے جاسکتے ہیں جبکہ مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کے حدود میں اسکیمات کے متعلق شعور بیداری کے سلسلے میں کوئی ٹھوس اقدامات نہیں کئے جارہے ہیں جس کی وجہ سے شہریان حیدرآباد کے طرز زندگی میں کوئی تیز رفتار تبدیلی نہیں دیکھی جارہی ہے ۔ عوام یہ چاہتے ہیں کہ منتخبہ عوامی نمائندے اور غیرسرکاری تنظیمیں مشترکہ طورپر سرکاری اسکیمات کے متعلق عوام میں شعور اُجاگر کرنے کے اقدامات کریں تاکہ عوام کو اس بات سے واقفیت حاصل ہو کہ حکومت اُن کیلئے کتنی اسکیمیں چلارہی ہے اور کونسی اسکیم سے استفادہ کیلئے اُنھیں کیا ضروری دستاویزات جمع کرنے ہوں گے ۔ شہریان حیدرآباد کی یہ عام شکایت ہے کہ شہر میں سیاسی جماعتیں صرف اُس وقت سرگرم نظر آتی ہیں جب فہرست رائے دہندگان میں ناموں کی شمولیت کا مسئلہ ہوتا ہے جبکہ حکومت کی جانب سے چلائی جانے والی کئی اسکیمات کے متعلق عوام کو معلومات نہیں ہوتی لیکن انھیں معلومات بہم پہنچانے کیلئے کوئی طریقہ کار اختیار نہیں کیا جاتا ۔ شہری علاقوں میں بسنے والے عوام کے لئے حکومت کے مختلف محکمہ جات کی جانب سے علحدہ علحدہ اسکیمات جیسے خواتین و اطفال کے علاوہ نوجوانوں کیلئے علحدہ علحدہ اسکیمیں چلائی جاتی ہیں ، اسی طرح محکمہ کھادی اینڈ ویلیج بورڈ کی جانب سے ضرورت مندوں کیلئے مختلف اسکیمات چلائی جاتی ہیں جن کے متعلق شہری علاقوں کے عوام بالخصوص پرانے شہر سے تعلق رکھنے والے افراد کو معلومات ہی نہیں ہوتی ۔ اسی لئے منتخبہ عوامی نمائندوں کے علاوہ ضلع انتظامیہ اور مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد کو چاہئے کہ وہ عوام میں ان اسکیمات کے متعلق شعور بیداری مہم چلائیں تاکہ عوامی ترقی ، شہری ترقی کا اہم جز بن سکے ۔ عموماً بلدی عہدیدار خود کو بنیادی سہولتوں کی فراہمی اور محصولات کی وصولی کی حد تک محدود کئے ہوئے ہوتے ہیں جبکہ صحت عامہ اور کھیل کود جیسے شعبہ بھی بلدیہ میں موجود ہیں۔ اسی طرح ضلع انتظامیہ کی جانب سے مختلف اُمور کی انجام دہی کیلئے شعبہ جات ترتیب دیئے گئے ہیں ۔ اسی طرح اگر شعور بیداری اور سرکاری اسکیمات سے استفادہ کیلئے عوامی رجحان میں اضافہ کیا جاتا ہے تو ایسی صورت میں نہ صرف شہری علاقوں میں رہنے والے عوام کی حالت میں تبدیلی آئے گی بلکہ شہر کی تیز رفتار ترقی بھی ممکن ہوسکے گی ۔

TOPPOPULARRECENT