Monday , August 21 2017
Home / ہندوستان / قتل کیس کی تحقیقات میں گجرات پولیس کا تساہل

قتل کیس کی تحقیقات میں گجرات پولیس کا تساہل

آشارام کے حواری کو پیش کرنے عدالت کا حکم
مظفر نگر ۔ 13 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ایک مقامی عدالت نے آج اکھیل گپتا قتل کیس کے سلسلہ میں متنازعہ سادھو آشارام کے حواری کارتک ہلدار کو پیش کرنے میں گجرات پولیس کی ناکامی پر شدید اعتراض کیا ہے اور یہ ہدایت دی ہے کہ 8 اگست کو انہیں ( کارتک ) پیش کیا جائے ۔ چیف جوڈیشیل مجسٹریٹ گریما چودھری نے یہ احکامات مقامی پولیس کی اس درخواست پر جاری کیے کہ اکھیل گپتا قتل کیس کی تحقیقات میں ہلدار سے پوچھ تاچھ ناگزیر ہے ۔ جو کہ خود ساختہ سادھو آشارام کے خلاف عصمت ریزی کیس کا اہم گواہ ہے ۔ قبل ازیں عدالت نے گجرات پولیس کو ہدایت دی تھی کہ ہلدار کو پیش کیا جائے جو کہ ماہ مارچ میں رائے پور چھتیس گڑھ میں گرفتاری کے بعد احمد آباد کی جیل میں محروس ہے ۔ وہ ، آشا رام کا باورچی اور شخصی مددگار تھا جب کہ ایک 16 سالہ طالبہ کی عصمت ریزی کے الزام میں بابا آشارام ، اگست 2013 سے جیل میں بند ہے ۔۔

 

شادی کی تقریب میں تصادم
کانپور ۔ 13 ۔ جولائی : ( سیاست ڈاٹ کام ) : ایک شادی کی تقریب سے 6 نوجوانوں کو مشہور فلمی گانوں کے ریکارڈ بجانے کے مسئلہ پر تصادم کے بعد پولیس اسٹیشن گھسیٹتے ہوئے لے گئے ۔ پولیس نے بتایا کہ راجندر کمار کی دختر کی تقریب شادی میں دو گروپوں میں تصادم ہوگیا جب ایک گروپ سے وابستہ شرابیوں نے بارات میں ڈیسک جاکی کو حکم دیا کہ بالی ووڈ نمبر ، ڈی جے والے بابو میرا گانا بجا دے ، سنایا جائے ۔ تاہم دوسرے گروپ نے ایک نغمہ ناگن ’ تونے ‘ بجانے کا اصرار کیا ۔ جس کے باعث دونوں گروپس دھینگا مشتی ہوگی ۔ پولیس نے بتایا کہ اس واقعہ میں 6 افراد کو گرفتار کر کے وارننگ کے بعد رہا کردیا گیا ۔۔

TOPPOPULARRECENT