Monday , September 25 2017
Home / شہر کی خبریں / !قدیم سونا رکھنے والوں کے لیے دھکہ

!قدیم سونا رکھنے والوں کے لیے دھکہ

فروخت یا تبدیلی پر جی ایس ٹی کا عوام پر اضافی بوجھ
حیدرآباد ۔ 13 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : کیا آپ اپنے پاس موجود سونا فروخت کرنا چاہتے ہیں ؟ اگر جواب ہاں ہے تو ایک سے زیادہ مرتبہ از سر نو غور کریں کیوں کہ اس طرح کی فروخت پر حکومت نے واضح طور پر 3 فیصد جی ایس ٹی وصول کرنے کا فیصلہ کرچکی ہے ۔ اپنے پاس موجود قدیم سونا فروخت کرنے پر حاصل ہونے والے پیسوں سے نئے جواہرات یا سونے خریدنے پر جی ایس ٹی ایسی خرید و فروخت میں شامل ہوجائے گا بصورت دیگر ہر 100 روپئے پر 3 روپئے بطور جی ایس ٹی ادا کرنا پڑے گا اگر سونے کا کاروبار کرنے والے اس معاملے میں کچھ اونچھ نیچھ کرتے ہیں تو ریورس چارج کے تحت کاروباریوں کو مکمل جی ایس ٹی کھاتوں میں جمع کرنا پڑے گا ۔ پرانے سونے کو نئے ڈیزائن میں تبدیل کرنا یا اس کی صورت و شکل میں تبدیلی لانا مزید مالی بوجھ بن جائے گا ۔ اس کو جاب ورک کے زمرے میں شامل کرتے ہوئے 5 فیصد جی ایس ٹی وصول کیا جائیگا ۔۔

TOPPOPULARRECENT