Saturday , July 22 2017

قران

یقیناً پر ہیز گار اس دن باغوں اور چشموں میں آباد ہونگے ، (انہیں حکم ملیگا) داخل ہو جاؤ ان جنتوں میں خیر و عافیت کے ساتھ بےخوف ہو کراور ہم نکال دینگے جو کچھ ان کے سینوں میں کینہ ( وغیرہ) تھا وہ بھائی بھائی بن جائیں گے اور تختوں پر آمنے سامنے بیٹھے ہوں گے۔ (سورۃ الحجر : ۴۵ تا ۴۷ )
مغضوبین کے احوال بیان کرنے کے بعد اب محبوبین کی عزت افزائیوں کا ذکر ہو رہا ہے۔
دنیا میں دو نیک آدمی بھی بعض غلط فہمیوں کی وجہ سے ایک دوسرے سے کھچے کھچے رہ سکتے ہیں۔ دل میں ایک دوسرے کے متعلق حسد اور منافرت بھی پیدا ہو جاتی ہے۔ جس کے باعث شکر رنجی بلکہ جنگ و جدال تک بھی نوبت پہنچ جاتی ہے۔ قیامت کے دن جنت میں داخل ہونے کا جب حکم ملے گا تو دلوں کو حسد و بغض کی آلائشوں سے پاک کر دیا جائے گا اور سب نیک بندے باہم شیر و شکر ہو جائیں گے۔ حضرت علی کرم اللہ وجہہ سے مروی ہے کہ آپ نے فرمایا ارجوان اکون انا وعثمان وطلحۂ وزبیر منھم میں امید کرتا ہوں، کہ میں، عثمان، طلحہ، زبیر انہی لوگوں میں سے ہوں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT