Wednesday , September 20 2017
Home / شہر کی خبریں / قرآنی تعلیمات میں ہر مسئلہ کا حل موجود

قرآنی تعلیمات میں ہر مسئلہ کا حل موجود

سیاست دینی انعامی مقابلہ قرآنی تعلیمات کو سمجھنے کا ایک اچھا موقع ، جناب زاہد علی خان و مولانا زبیر ہاشمی کا خطاب
حیدرآباد ۔ 24 اگسٹ ۔ ( سیاست نیوز) برادران اسلام میں دینی جذبہ پیدا کرنے و دینی علم میں پختگی پیدا کرنے کے خیال سے ادارہ سیاست اور ریاض سعودی عرب میں مقیم حیدرآبادی کرم فرماؤں کے مشترکہ زیر اہتمام ہر سال کی طرح امسال بھی قرآنی آیات پر مبنی سوالات کے کوپنوں کا اعلان کیا گیا تھا جس میں سینکڑوں مسلمانوں نے حصہ لیا اور اپنی دینی معلومات کا والہانہ ثبوت دیا ہے۔ کوپنوں کا کافی باریکی سے جائزہ لینے کے بعد قرعہ اندازی کے ذریعہ انعامات کے اعلان کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ ان کوپنوں کی قرعہ اندازی کی تقریب آج سینکڑوں افراد کی موجودگی میں محبوب حسین جگر ہال واقع احاطہ روزنامہ سیاست عابڈس میں جناب زاہد علی خان ایڈیٹر روزنامہ سیاست و مولانا سید زبیر ہاشمی نائب مفتی جامعہ نظامیہ و مرتب مذہبی صفحہ روزنامہ سیاست کے ہاتھوں عمل میں آئی۔ اس موقع پر جنرل منیجر روزنامہ سیاست جناب میر شجاعت علی ، حبیب محمد بن عبداﷲ رفیع کمپیوٹر آپریٹر روزنامہ سیاست کے علاوہ دیگر علماء کرام اور کوپن داروں کی کثیر تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر جناب زاہد علی خان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج سے تقریباً 12 برس پہلے میرے ایک محترم دوست (زکریا سلطان) جو سعودی عرب (ریاض) میں رہتے ہیں اُن کو یہ خیال آیا کہ رمضان المبارک میںروزآنہ ایک کوپن شائع کیا جائے جس میں ایک سوال رہے گا اور مہینہ بھر کے تمام جوابات صحیح ہونے پر وہ خوش نصیبوں کے لئے 50,000 روپئے سیاست کو روانہ کریں گے۔ الحمدﷲ ! سعودی عربیہ (ریاض) میں مقیم حیدرآبادیوں اور ادارہ سیاست کے اشتراک سے یہ سلسلہ جاری ہے اور سعودی عربیہ میں مقیم حیدرآبادی احباب کی رقم میں مزید 50 ہزار روپئے ادارہ سیاست کی جانب سے شامل کرتے ہوئے ایک لاکھ روپئے نقد انعامات دیئے جاتے ہیں۔جو لوگ صحیح جوابات دیئے اور انعامی مقابلہ میں شامل ہوئے وہ خوش نصیب ہیں لیکن بہت سے جوابات جو رد کئے گئے اُن کی بھی بڑی تعداد ہے ۔ ایک آدھ سوال کا غلط جواب دینے سے وہ انعامی مقابلہ میںحصہ لینے سے محروم رہے۔ میں اُن سب کو بھی مبارکباد دیتا ہوں کہ ایک بڑی تعداد نے اس مہم میں حصہ لیا جو قرآن کی تعلیمات کو سمجھنے کا ایک اچھا موقع تھا۔ یہ انعامی مقابلہ نہ صرف آپ سب کیلئے بلکہ سیاست کیلئے بھی بابرکت ہے اور یہ سلسلہ انشاء اللہ جاری رہے گا اور اس کا ثواب نہ صرف ہم کو بلکہ آپ جواب دینے والوں کو بھی ملتا رہے گا ۔ آج ملک کے جو بھی حالات ہیں ، ان حالات کا مقابلہ کرنے کیلئے ہم کو قرآنی تعلیمات کے ذریعہ اُس کا حل نکالنے کی کوشش کرنی چاہئے ۔ ہوتا یہ ہے کہ جذبات میں فیصلہ کرلیا جاتا ہے ، اس سے ملت اسلامیہ کو کوئی فائدہ ہونے والا نہیں ۔ لیکن اگر ہمارے سامنے قرآن شریف ہو اور اُس کے تابع ہم اپنے سفر کو جاری رکھے تو انشاء اللہ ہر مصیبت کا سامنا کرنے میں ہم کو کامیابی نصیب ہوگی ۔ مولانا سید زبیر ہاشمی نے خطاب کرتے ہوئے قرآنی آیات کے حوالہ سے بتایا کہ اللہ رب العزت فرماتا ہے کہ لوگو! تمہارے چاہنے سے کچھ نہیں ہوتا اﷲ جو چاہتا ہے وہی ہوتا ہے۔ اس آیت پاک کے ذریعہ ہمیں اپنی زندگیوں کا جائزہ لینا ہے کہ ہماری زندگی شریعت کے مطابق کتنی گذر رہی ہے اور شریعت کی مخالفت میں کتنی گذر رہی ہے ۔ کیونکہ زندگی میں اُتار چڑھاو آتا رہتا ہے لیکن وہ بندہ ہمیشہ کامیاب رہتا ہے جس کی مرضی مولا کی مرضی کے مطابق ہوتی ہے ۔ اگر کوئی بندہ یہ چاہتا ہے کہ اللہ کے خوف کو ہمیشہ اختیار کرے ، نبی کی محبت کو اختیار کرے تو دنیا کے حالات بدلتے جائیں گے لیکن اُس کی زندگی وہی رہے گی جو پہلے تھی ۔ تو آج اسی چیز کو ہم ذہن میں رکھ کر اپنی زندگی کو آگے بڑھائیں۔ جیسا کہ آج کا جلسہ ہمارے لئے ایک عظیم اور یادگار موقع ہے ۔ مولانا نے ماہ رمضان المبارک کے دوران قرآنی سوالات کے کوپن مقابلہ میں حصہ لینے والے سیاست کے قارئین کے جذبہ کی ستائش کی اور مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ اس مقابلہ سے کوپن دار کو انعام ملے نہ ملے لیکن اللہ کے پاس ان کو اجر یقینی ہے۔ اس موقع پر قرعہ اندازی کے ذریعہ انعام اول دس ہزار روپئے امتہ الودود کشمیر گڈہ کریم نگر ، انعام دوم پانچ ہزار روپئے مستان علی ، وجئے نگر کالونی حیدرآباد ، انعام سوم تین ہزار روپئے شہناز بیگم ، نامپلی اور چوتھا انعام دو ہزار روپئے محمد عامر تاڑبن ، زو پارک کو حاصل ہوا جبکہ 80 ایک ہزار روپئے کے ترغیبی انعامات کی بھی قرعہ اندازی عمل میں آئی۔پہلے چار انعامات حاصل کرنے والوں کو ذریعہ خط مطلع کرتے ہوئے دفتر سیاست میں انعامات دیئے جائیں گے جبکہ 80 ترغیبی انعامات پانے والوں کو ان کے رہائشی پتہ پر ذریعہ منی آرڈر ( پوسٹ ) انعامی رقم بھیجی جائیگی۔ قبل ازیں مولانا سید زبیر ہاشمی کی قرات کلام پاک سے تقریب کا آغاز ہوا۔ جناب حبیب محمد بن عبداللہ رفیع نے حمد باری تعالیٰ و نعت شریف پیش کرنے کی سعادت حاصل کرنے کے علاوہ نظامت کے فرائض بحسن و خوبی انجام دئیے اور آخر میں شکریہ ادا کیا۔

TOPPOPULARRECENT