Saturday , August 19 2017
Home / اضلاع کی خبریں / قربانی کے جانوروں کی قیمتوں میں زبردست اُچھال

قربانی کے جانوروں کی قیمتوں میں زبردست اُچھال

کلواکرتی /13 ستمبر ( محمد عبدالصمد کی رپورٹ ) کلواکرتی میں قربانی کیلئے جانوروں کی قیمتیں آسمان کو چھو رہی ہیں ۔ جس کے سبب کاروباری لوگ یہاں پر بازار ہونے کے سبب آکر کافی تشویش میں دیکھے گئے ۔ بتایا جاتا ہے کہ کسان بیوپاری لوگ جان بوجھ کر قیمتیں بہت زیادہ کر رہے ہیں ۔ کلواکرتی اورجوپلی کے بازاروں کو دیکھا گیا جہاں پر قیمتیں آسمان سے باتیں کرتی ہوئی دکھائی دیں ۔ جوپلی بازار میں بڑے جانوروں کی قیمت 30 ہزار سے 50 ہزار فی جانور تھی جبکہ اس کے بیوپاری عوام کو قربانی کا جانور گھر تک چاہے وہ حیدرآباد ہی کیوں نہ ہو پہونچانے کا تیقن دے رہے تھے ۔ اسی طرح چھوٹے جانوروں کی قیمتیں بھی بہت زیادہ تھی ۔ بعض بیوپاری جوڑی بناکر 15 تا 20 ہزار فی جوڑی فروخت کر رہے تھے اور بعض 10 تا 12 کیلو گوشت کے بکروں کی قیمت 9 تا 15 ہزار تک فروخت کر رہے تھے ۔ ایسے ہی کلواکرتی میں صرف بڑے جانوروں کی فروخت ہوتی ہے جہاں پر حیدرآباد جڑچرلہ دیورکنڈہ ناگرکرنول محبوب نگر وغیرہ کے کافی زیادہ مقدار میں کاروباری عوام افراد آتے ہیں ۔ بقر عید کے علاوہ دیگر ایام میں اچھا خاصا یہ لوگ کاروبار کرلیتے ہیں لیکن ان دنوں میں کسان موقع کا کافی زیادہ فائدہ اٹھاتے ہوئے دوگنی ، تیگنی قیمت پر فروخت کرنے کی کوشش کرتے ہیں ۔ جس میں اکثر یہ لوگ کامیاب بھی ہوجاتے ہیں۔ آج کافی تعداد میں دیگر علاقوں کے عوام نے ان بازاروں کا رُخ کیا لیکن قیمتوں کو سنکر کافی تشویش میں دیکھے گئے  جہاں عوام جلد سے جلد قربانی کیلئے جانوروں کو حاصل کرتے ہوئے کچھ ایام اپنے گھروں میں رکھ کر ان کی دیکھبھال کرتے ہوئے قربانی دینیکے قائل ہیں وہیں پر بیوپاری 10 تا 20 ایام اور رہنے کے سبب زیادہ سے زیادہ قیمت پر فروخت کی کوشش کر رہے ہیں ۔ جیسے جیسے ایام قریب ہوتے جائیں گے ان کی قیمتوں میں گرافٹ آتی جائے گی ۔ ویسے اس سال ادھر کے علاقہ میں چھوٹے جانوروں کی وافر مقدار موجود ہے جبکہ کڑتال تا کلواکرتی روڈ پرجہاں تک علم ہے 3 تا 4 فارم ہاوز بھی ہیں جن میں وافر مقدار میں بکرے موجود ہیں بڑے جانوروں کی قربانی کیلئے جہاں کئی ایک طرف سے ایک خوف کا ماحول دیکھنے میں آرہا ہے۔ اُسی کے سبب چھوٹے جانوروں کی قیمتوں میں زبردست اچھال آرہا ہے جس کے سبب ایک عام آدمی جو سنت ابراہیمی کی تکمیل کی آرزو رکھتا ہے ایسے میں چھوٹے جانوروں کی خریدی اس کی اجازت نہیں دیتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT