Sunday , August 20 2017
Home / جرائم و حادثات / قرض دلانے کے نام پر دھوکہ دینے والے دو افراد گرفتار

قرض دلانے کے نام پر دھوکہ دینے والے دو افراد گرفتار

حیدرآباد۔ /26 اپریل (سیاست نیوز) قرض دلانے کے بہانے سینکڑوں افراد کو دھوکہ دینے والے دو دھوکے باز بشمول ایک خاتون کو سنٹرل کرائم اسٹیشن کی سائبر کرائم پولیس نے اترپردیش سے گرفتار کرلیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ گاجولا راما رم ویلیج کے ساکن جے کمارا سوامی کو سپٹمبر 2015 ء میں راجیو کمار نامی شخص جو خود کو آئی این جی ویسیا بینک نئی دہلی کا آفیسر ظاہر کرتے ہوئے 3 فیصد سود پر 10 لاکھ کا قرض فراہم کرنے کا وعدہ کیا ۔ کمارا سوامی نے دھوکہ باز کے جھانسے میں آکر ایچ ڈی ایف سی کے بینک کھاتے میں ایک لاکھ 20 ہزار روپئے منتقل کئے  ۔ اتنا ہی نہیں کچھ دیر بعد واسو پنڈت جو خود کو انکم ٹیکس عہدیدار ظاہر کرتے ہوئے قرض کی رقم پر 1 لاکھ 35 ہزار روپئے انکم ٹیکس فیس ادا کرنے کیلئے کہا جس پر درخواست گزار نے ایک اور بینک کھاتے میں مذکورہ رقم منتقل کی ۔ کمارا سوامی نے راجیو کمار اور واسو دیو پنڈت کے موبائیل فون پر ربط پیدا کرنے کی کوشش کی لیکن اچانک سوئچ آف ہونے کے سبب سائبر کرائم پولیس سے اس سلسلے میں شکایت درج کروائی گئی ۔ سائبر کرائم پولیس نے آئی ٹی ایکٹ اور مجرمانہ سازش اور دھوکہ بازی کے دفعات کے تحت مقدمہ درج کرتے ہوئے دھوکہ بازوں کی تلاش شروع کردی اور انہیں کامیاب طور پر نوئیڈا اترپردیش میں گرفتار کرلیا ۔ انسپکٹر سائبر کرائم مسٹر کے وی ایم پرساد نے بتایا کہ اس دھوکہ بازوں کی ٹولی کا سرغنہ مدھو ویندر سنگھ ہے جو اپنے دیگر ساتھیوں رینو پانڈے اور امرچند کیسری کی مدد سے سونو ورلڈ ویژن لمیٹیڈ اور سگنیچر ویلتھ مینجمنٹ نامی دو فرضی کمپنیاں قائم کی اور ان کمپنیوں کے ذریعہ معصوم عوام کو قرض دلانے کے بہانے دھوکہ دینے کا منصوبہ تیار کیا ۔ دھوکہ بازی کیلئے مذکورہ ملزمین نے ٹیلی کالرس بھی ملازمت رکھے اور کئی سم کارڈس کا استعمال کرتے ہوئے مذکورہ کمپنیوں کے فرضی بینک کھاتوں میں لاکھوں روپئے کی رقم حاصل کی ۔ سائبر کرائم پولیس نے بتایا کہ مذکورہ دھوکے بازوں نے ملک بھر میں 3 کروڑ روپئے کی دھوکہ دہی کی ہے ۔ گرفتار ملزمین امرچند کیسری اور رینو پانڈے عرف رشیکو عدالت میں پیش کرتے ہوئے جیل منتقل کردیا ۔

TOPPOPULARRECENT