Friday , September 22 2017
Home / اضلاع کی خبریں / قرض لے کر طلبہ کیلئے پکوان کی تیاری

قرض لے کر طلبہ کیلئے پکوان کی تیاری

یلاریڈی میں مڈڈے میلس ایجنسی تین ماہ سے بلز سے محروم

یلاریڈی۔/10فبروری، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) یلاریڈی حلقہ کے زیادہ تر منڈلوں میں سرکاری اسکولوں پر مڈڈے میلس تیار کرنے والوں کو گزشتہ تین ماہ سے کوئی بل ادا نہیں کی گئی جس پر ایجنسی ذمہ داران قرض لے کر اسکولوں میں پکوان تیار کررہے ہیں اور کچھ ذمہ دار تو قرض لانے کے قابل بھی نہ ہونے پر اس ذمہ داری سے کنارہ کشی اختیار کرتے ہوئے مڈڈے میلس ایجنسی چھوڑرہے ہیں۔ یلاریڈی حلقہ کے چھ منڈلوں میں 428 ایجنسیاں مڈڈے میلس تیار کررہی ہیں۔ منڈل یلاریڈی میں 58 لنگم پیٹ میں 75 گندھاری میں 158، تاڑوائی میں 53 اور سداشیو نگر میں 52 مڈڈے میلس ایجنسیاں کام کررہی ہیں۔ انہیں گزشتہ تین ماہ سے غذا کی بل ادا نہیں کی گئی۔ یلاریڈی منڈل کے دیون پلی، میسن پلی اسکولوں میں دو ماہ سے طلباء کو مڈ ڈے میلس نہیں مل رہا ہے۔ دیون پلی اسکول میں طلباء کی تعداد کم ہونے پر اور میسن پلی اسکول میں بلوں کی عدم ادائیگی پر گزشتہ دو ماہ سے ایجنسی ذمہ دار نے خدمات ترک کردی ہیں۔ یلاریڈی ہائی اسکول میں بلوں کی وقت پر عدم ادائیگی سے گزشتہ ستمبر۔ اکٹوبر سے ایجنسی بند کردی گئی ہے جس سے اساتذہ ایک کے بعد ایک روزانہ پکوان کررہے ہیں۔ منڈل لنگم پیٹ کے بوتائی پلی، ایکاپلی، آغا پلی، اسکولوں میں پندرہ دن قبل ایجنسی ذمہ داروں نے خدمات چھوڑدی ہیں۔ جس پر اسکول اساتذہ نے بڑی مشکلات سے جدید ایجنسی قائم کی ہے، حکومت جب مڈڈے میلس نیک نیتی سے چلانا ہی نہیں چاہتی تو طلباء کو ادھار کی غذا کیوں دے رہی ہے کیونکہ ایجنسی چلانے والے کوئی دولت مند افراد نہیں ہوتے، بلوں کی ادائیگی کے بناء طلباء کو یہ لوگ کس طرح غذا تیار کرکے دے سکتے ہیں۔ مڈڈے میلس کے نام پر ایک طرف اساتذہ پریشان اور دوسری طرف ایجنسی ذمہ داران پریشان ہیں اور طلباء کو ادھار کی غذا کیوں۔؟

TOPPOPULARRECENT