Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / قریبی رشتہ داروں میں شادی سے بچوں کو مخصوص امراض لاحق

قریبی رشتہ داروں میں شادی سے بچوں کو مخصوص امراض لاحق

سنٹر فار سلیولر اینڈ مالیکیولر بائیولوجی کی اسٹڈی میں انکشاف
حیدرآباد ۔ 18 ۔ جولائی : ( سیاست نیوز) : قریبی رشتہ داروں کے درمیان ہونے والی شادیوں سے بچوں کو مخصوص امراض سے متاثر ہونے کا زیادہ خطرہ لاحق ہوتا ہے اور یہ ریسیسیو مرض کا بڑا سبب ہوتا ہے اور اس کی وجہ بچے مختلف امراض کا شکار ہوتے ہیں ۔ چنانچہ کمیونسٹی کے اندر شادی کرنے والوں کے بچے مخصوص پیدائشی امراض سے متاثر ہوسکتے ہیں اور ان میں اس کا زیادہ احتمال ہوتا ہے ۔ سی سی ایم بی کی اسٹڈی کے مطابق وسیاس جوڑوں میں تکلیف کے مرض سے متاثر ہوتے ہیں اسی طرح راجوس کارڈیومئیو پیتھی سے متاثر ہوتے ہیں ۔ اس میں ہر شخص کئی موٹیشنس کا حامل ہوتا ہے اور اگر وہ اسی طرح کے موٹیشن رکھنے والوں کے ساتھ شادی کرے تو اس سے سنگین ریسیسیو مرض ہوسکتا ہے ۔ سنٹر فار سلیولر اینڈ مالیکیولر بائیولوجی (CCMB) کے سائنس دانوں نے کہا کہ ان کی جانب سے کی گئی ایک نئی اسٹڈی میں معلوم ہوا کہ لوگوں کو شادی کرنے سے قبل موٹیشنس کا سبب بننے والے ریسیسیو مرض کے لیے جانچ کروانی چاہئے ۔ تاہم قریبی رشتہ داروں میں ہونے والی شادیوں میں اس طرح کے امراض کا خطرہ ہوتا ہے ۔ آج یہاں ایک پریس کانفرنس سے مخاطب کرتے ہوئے ڈاکٹر راکیش کے مشرا ، ڈائرکٹر سی سی ایم بی نے جنہوں نے اس اسٹیڈی کی قیادت کی ، کہا کہ ہندوستان میں چار بڑی آبادیاں ہیں ۔ انڈو یوروپین ، دراوڑینس ، آسٹوئیٹک ، تائبتو برمیز اور ان میں ہر ایک کے بڑی آبادی گروپس ہیں ۔ مختلف طبقات کے ساتھ بشمول قبائلی ۔۔

TOPPOPULARRECENT