Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / قطر کا دوحہ بینک ہندوستان میں مزید برانچس کھولنے کا خواہاں

قطر کا دوحہ بینک ہندوستان میں مزید برانچس کھولنے کا خواہاں

انڈیا ، قطر اور جی سی سی کے درمیان بائی لیٹرل ٹریڈ پر پروگرام میں ایگزیکٹیو آفیسر سیتارامن کا خطاب
حیدرآباد 21 نومبر (سیاست نیوز) قطر کے دوحہ بینک نے آج کہاکہ اس کا منصوبہ ہندوستان میں مزید برانچس کھولنے اور آئندہ تین سالوں میں 5 بلین امریکی ڈالر کے دگنے ایکسپوژر کا ہے۔ اب تک ان کا ایکسپوژر ہندوستانی مارکٹ میں 2.3 بلین ہے۔ مشرق وسطیٰ کے اس بینک نے آر بی آئی کی منظوری سے جاریہ سال کی ابتداء میں انڈین آپریشنس کا آغاز کیا ہے۔ اس کی پہلی برانچ ممبئی میں بعدازاں مزید دو برانچس ممبئی اور کوچی پر مبنی ایچ ایس بی سی بینک عمان کو شروع کیا گیا۔ آر سیتا رامن چیف ایگزیکٹیو آفیسر دوحہ بینک جو حیدرآباد میں ہیں، بزنس پروموشن ڈرائیو میں حصہ لیتے ہوئے کہاکہ مشرق وسطیٰ سے سرمایہ کار اور بینکس ہندوستان میں سرمایہ کاری کے ان فولڈنگ مواقع پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔ گزشتہ سال بینک کو لائسنس حاصل ہوا تھا۔ انھوں نے کہاکہ ہندوستان اُبھر رہا ہے اور یہاں مزید بینکوں کی ضرورت ہے۔ ملک مجموعی طور پر انڈر بینکڈ اور انڈر کیپٹلائزڈ ہے اسی لئے ہم چاہتے ہیں کہ ادائیگیوں، سرمایہ کاری اور تجارت سے استفادہ کریں۔ ہندوستان کی فروغ پارہی مارکٹس، مقامات جیسے حیدرآباد کے مختلف گوشوں میں ہم پیمانہ کو بڑھانے جارہے ہیں۔ یقینا ہم اوسط اور طویل مدت میں اپنے قدم جمانا چاہتے ہیں۔ ہم قطر کے ساتھ ساتھ ہندوستان میں ریگولیٹرس کیلئے اپنی ذمہ داریاں پوری کریں گے۔ ہم آندھراپردیش اور تلنگانہ دونوں ریاستوں کے علاوہ ٹاملناڈو، گجرات، کرناٹک، مغربی بنگال، کیرالا میں بھی برانچس قائم کرنا چاہتے ہیں۔ بغیر کسی صراحت کے ہم برانچس کی تعداد کھولیں گے۔ آندھرا چیمبر آف کامرس کے اشتراک سے دوحہ بینک کے زیراہتمام انڈیا، قطر اور گلف کوآپریٹیو کونسل (جی سی سی) کے درمیان بائی لیٹرل ٹریڈ اپارچونٹیز پر پروگرام میں شرکت کے لئے سیتا رامن شہر میں آئے ہوئے ہیں۔ دوحہ بینک اس کے نمائندہ دفاتر سنگاپور، ہانگ کانگ، شنگھائی (چین)، سیول (جنوبی کوریا)، ٹوکیو (جاپان)، سڈنی (آسٹریلیا)، استنبول (ترکی) ، فرینکفرٹ (جرمنی) ، لندن (یوکے) ، جوہانسبرگ (جنوبی افریقہ) ، شارجہ (یو اے ای) اور ٹورنٹو (کینیڈا) میں رکھتا ہے۔ قطر 2022 ء میں فیفا فٹبال ایونٹ کی میزبانی کرے گا اور یہ پہلا جی سی سی ملک ہوگا جو اس ایونٹ کی میزبانی کرے گا۔ سیتارامن نے کہاکہ جی سی سی ۔ انڈیا بائی لیٹرل ٹریڈ 130 بلین امریکی ڈالر سے زیادہ ہے اور قطر ۔ انڈیا بائی لیٹرل ٹریڈ 16 بلین امریکی ڈالر کے قریب ہے۔

TOPPOPULARRECENT