Friday , June 23 2017
Home / Top Stories / قطر کو امریکی جنگی طیاروں کی فروخت ، جاری بحران نظرانداز

قطر کو امریکی جنگی طیاروں کی فروخت ، جاری بحران نظرانداز

دوحہ /15 جون (سیاست ڈاٹ کام) امریکہ نے قطر کے دیگر خلیجی حلیف ممالک کے ساتھ تنازعہ کے باوجود جنگی طیارہ فروخت کرنے سے اتفاق کیا ہے ۔ جس سے دونوں ممالک کے مابین فوجی اتحاد کا اظہار ہوتا ہے ۔ امریکہ نے سفارتی بحران کے تعلق سے اپنے دیرینہ حلیف قطر کے بارے میں متضاد اشارے دیئے ہیں ۔ گزشتہ ہفتہ صدر امریکہ ڈونالڈ ٹرمپ نے قطر کے خلاف سعودی زیرقیادت موقف کی تائید کا اظہار کیا تھا لیکن پنٹگان اور اسٹیٹ ڈپارٹمنٹ کے عہدیداروں نے قطر کے موقف کی تائید برقرار رکھی ہے جہاں امریکہ کا مشرق وسطیٰ میں سب سے بڑا فوجی اڈہ موجود ہے ۔ عراق شام اور افغانستان میں امریکی فوجی کارروائیاں قطر میں واقع کمانڈ ہیڈکوارٹر سے انجام دی جاتی ہیں۔ امریکی ڈیفنس سکریٹری جم میٹیس نے کل واشنگٹن میں قطری ہم منصب خالد العطیہ کا خیرمقدم کیا اور دونوں ممالک نے F-15 طیاروں کی فروخت کے معاہدوں پر دستخط کئے ۔ 12 بلین ڈالرس کی اس معاملت کے ذریعہ قطر کو انتہائی عصری طیارے حاصل ہوں گے اور باہمی فوجی تعاون میں اضافہ ہوگا ۔ معاملت کے بارے میں مزید تفصیلات نہیں بتائی گئی لیکن ذرائع نے کہا کہ 36 جنگی طیارے فروخت کئے جارہے ہیں ۔ خالد العطیہ نے کہا کہ اس معاہدے سے قطر کی سلامتی میں اضافہ ہوگا اور امریکہ میں 60 ہزار روزگار کے مواقع فراہم ہوں گے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT