Saturday , June 24 2017
Home / Top Stories / قومی اقلیتی کمیشن کے پانچ ارکان نامزد، مزید دو کا جلد تقرر

قومی اقلیتی کمیشن کے پانچ ارکان نامزد، مزید دو کا جلد تقرر

جین نمائندہ شامل ، باصلاحیت افراد کا انتخاب، اقلیتوں سے انصاف کی توقع : مختار عباس نقوی
نئی دہلی ۔ 24 مئی (سیاست ڈاٹ کام) اقلیتوں کے قومی کمیشن میں مخلوعہ عہدیداروں پر اپوزیشن کی تنقیدوں کا سامنا کرنے کے بعد مرکز نے اس کمیشن کیلئے پانچ ارکان نامزد کیا ہے۔ اقلیتوں کا قومی کمیشن اقلیتی طبقات  کے مفادات کے تحفظ کا ذمہ دار سمجھا جاتا ہے اور اس سال مارچ سے اس میں ایک رکن بھی نہیں رہا تھا۔ کانگریس کی زیرقیادت سابق یو پی اے II حکومت کی طرف سے مقرر کردہ تمام سات ارکان 9 ستمبر 2015ء  اور اس سال 9 مارچ کے درمیان ریٹائر ہوئے تھے۔ وزارت اقلیتی امور کے ذرائع کے مطابق اترپردیش کے ایک سماجی کارکن خیرالحسن اس کمیشن کے چیرمین ہوں گے۔ کیرالا سے تعلق رکھنے والے بی جے پی لیڈر جارج کورئین، مہاراشٹرا کے سابق وزیر سلیکھا کمبھارے (بدھ مت) اور گجرات سے تعلق رکھنے والے جین برادری کے نمائندہ سنیل سنگھی  اور ادواڑہ اتھورنن انجمن کے صدر پجاری وڈا دستور جی خورشید (پالیسی) اس پیانل کے دیگر ارکان ہوں گے۔ ذرائع نے کہا کہ مزید دو ارکان کی نامزدگی کا عمل جاری ہے۔ یہ پیانل دو ایک دن میں دوبارہ کارکرد ہوجائے گا۔ یہ پہلا موقع ہیکہ چین نمائندہ کو بھی اس کمیشن میں شامل کیا گیا ہے۔ اس برادری کو اس کی خواہش پر اقلیتی فرقہ قرار دیتے ہوئے جنوری 2014ء میں مرکزی حکومت نے اعلامیہ جاری کیا تھا۔ اس پیانل کے ارکان کی میعاد تین سالہ ہوتی ہے۔ مملکتی وزیراقلیتی ا مور مختار عباس نقوی نے ان نامزدگیوں کی توثیق کی اور کہا کہ ’’یہ باصلاحیت افراد ہیں اور ہم توقع کرتے ہیں کہ وہ اقلیتوں سے متعلق امور و مسائل پر انصاف کریں گے‘‘۔ اقلیتوں کے قومی کمیشن سے متعلق 1992ء کے قانون کے تحت یہ کمیشن قائم کیا گیا تھا جس کا مقصد پانچ مذہبی برادریوں مسلمانوں، عیسائیوں، سکھوں، پارسیوں اور بدھ مت کے پیروؤں کی شکایات کا جائزہ لیا تھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT