Saturday , August 19 2017
Home / ہندوستان / قومی ترانہ کی مخالفت پر ہندو تنظیموں کی دھمکیاں

قومی ترانہ کی مخالفت پر ہندو تنظیموں کی دھمکیاں

الہ آباد میں اسکول مہر بند اور منیجر گرفتار
الہ آباد ۔ 8 ۔ اگست : ( سیاست ڈاٹ کام ) : پولیس نے آج ایک اسکول منیجر کو گرفتار کرلیا جس نے یوم آزادی کے موقع پر طلباء کو ’ قومی ترانہ ‘ پڑھنے کی اجازت سے انکار کردیا تھا ۔ دوسری طرف سرکاری حکام نے اسکول کو مہر بند کرنے کی کارروائی شروع کردی ہے جو کہ غیر قانونی طریقہ پر چلایا جارہا تھا ۔ علاقہ میں کشیدگی کے پیش نظر حفاظتی انتظامات کیے جارہے ہیں ۔ پولیس نے بتایا کہ علاقہ باگھرا میں واقع ایم اے کنونیٹ اسکول کے منیجر ضیا الحق کے خلاف قانون انسداد قومی ہتک کے تحت کیس درج کر کے گرفتار کرلیا گیا ہے ۔ حکومت کی منظوری کے بغیر گذشتہ 20 سال سے یہ اسکول چلانے اور منیجر کے خلاف الزامات کی تحقیقات کے لیے مجسٹریل انکوائری کا حکم دیدیا گیا ہے ۔ بی جے پی نے اسکول کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے ۔ جب کہ وشوا ہندوپریشد اور ہندو یووا واہنی کی مقامی یونٹس نے یہ دھمکی دی ہے کہ اگر اسکول بند نہیں کیا گیا تو احتجاج شروع کردیا جائے گا ۔ جس کے بعد اسکول کو مہر بند کردینے کے احکامات جاری کردئیے گئے ہیں ۔ ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ الہ آباد مسٹر اندرا ومشی نے بتایا کہ محکمہ تعلیمات کو ہدایت دی گئی ہے کہ اسکول میں زیر تعلیم 300 طلباء کو قریبی اسکولوں میں منتقلی کے لیے انتظامات کیے جائیں تاکہ ان کی تعلیمی متاثر نہ ہوسکے ۔ واضح رہے کہ یہ معاملہ اس وقت منظر عام پر آیا تھا ۔ جب اسکول کے 8 اساتذہ بشمول پرنسپل نے وندے ماترم پڑھنے کی اجازت نہ دینے پر گذشتہ ہفتہ استعفیٰ دیدیا تھا ۔ جب کہ طلباء کو یوم آزادی کے موقع پر قومی ترانہ گانے کے لیے مشق کروائی جارہی تھی ۔ تاہم اسکول منیجر ضیا الحق نے اپنے اقدام کی مدافعت کرتے ہوئے بتایا کہ قومی ترانہ میں شامل یہ الفاظ ’ بھارت بھاگیہ ودھاتا ‘ اسلام کے بنیادی اصولوں کے مغائر ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT