Thursday , August 17 2017
Home / ہندوستان / قومی سلامتی، ذرائع کی خفیہ نوعیت سے بالاتر

قومی سلامتی، ذرائع کی خفیہ نوعیت سے بالاتر

مرکزی وزیر برائے اطلاعات و نشریات ارون جیٹلی کا بیان
نئی دہلی ۔26اکٹوبر ( سیاست ڈاٹ کام ) صحافیوں کو اپنے ذرائع پوشیدہ رکھنے اور اُن کے تحفظ کا  عوامی مفاد میں حق حاصل ہے لیکن جب قومی سلامتی سے ان کا تقابل کیا جائے ذرائع کا خفیہ رکھنا قومی سلامتی سے زیادہ اہم نہیں ہوسکتا ۔ وہ سردار پٹیل یادگاری لکچر دے رہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ دیرینہ تنازعات یا مسئلہ جو زیر بحث ہے صحافیوں کے حق کے بارے میں ہے کہ انہیں اپنے ذرائع کے تحفظ کا حق حاصل ہے یا نہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ان کے خیال میں جس طریقہ سے دنیا بھر کی عدالتیں اس سلسلہ میں اقدامات کرچکی ہیں وہ درست سمت میں ہے ۔ کسی کو بھی اپنے ذرائع پوشیدہ رکھنے کا حق ہے لیکن جب قومی سلامتی کا سوال آجائے تو اسے ذرائع کی خفیہ نوعیت تک برتری حاصل ہوجاتی ہے ۔ ارون جیٹلی خود بھی ایک نامور قانون داں ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ یہ معاملہ انفرادی ساکھ اور عوامی مفاد کا ہے ۔انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں فیصلوں کا رجحان اسی سمت ہے ‘ چنانچہ قومی سلامتی کو ہر ملک میں ذرائع کی خفیہ نوعیت پر ترجیح دی جاتی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT