Wednesday , August 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / قوم کی پرورش میں خواتین کا نمایاں رول

قوم کی پرورش میں خواتین کا نمایاں رول

بیدر۔11؍مارچ۔(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)۔اسلام بچیوں کی تعلیم و تربیت کرنے پر والدین کو جنت کی خوشخبری د یاہے۔مردوں کی بہ نسبت عورتوں کو پڑھنے لکھنے کی زیادہ ضرورت ہوتی ہے۔اس لئے کہ انھیں تربیت نسل جیسا اہم فریضہ سر انجام دینا ہوتا ہے۔ رسولؐ نے علم کی اہمیت کو اس طرح بیان فرمایا ہے’’تعلیم کاحاصل کرنا ہر مسلمان مرد اور عورت پر فرض ہے‘‘۔عورتیں علم حاصل کئے بغیر نہ صرف گھر بلکہ معاشرے کی ترقی کی بھی ضامن ہوسکتی ہیں ۔کیونکہ علم تو انسان کی اصلاح کرتا ہے۔ شعور و آگہی کی راہیں کھولتا ہے۔ اس کو نگاڑتا نہیں ہے۔ ان خیالات کااِظہار جناب اقبال الدین انجینئر نے جلسہ عالمی یومِ خواتین کے موقع پر مدرسہ عربیہ نور الصفہ للبنات میلور بیدر میں کیا۔ انھوں نے اجتماع کے دوران کہا کہ راب العامین نے عورت کو زندگی کا بنیادی مرکز بناکر پیدا کیا ہے۔ عورت ہی کی وجہ سے نہ صرف دنیا اپنی شناخت حاصل کرتی ہے بلکہ انسانی زندگی عورت کے بغیر نامکمل اور ناکام رہتی ہے۔اللہ تعالی نے عورت کو مُختلف کردار اور مقامات عطا کئے ہیں۔ جس کے دامن ہی سب سے پہلے انسان کی پرورش ہوتی ہے۔ ماں کی گود انسان کا پہلا مدرسہ ہوتا ہے۔ اور انسانی زندگی کی عمارت کی بنیاد عورت ہے۔عورت اپنے بیوی کے کردار سے مرد کی زندگی میں تبدیلی پیدا کرتی ہے اور اپنے حسنِ سلوک سے ایک اچھے خاندان کی بنیاد ڈالتی ہے۔ دنیا عورت کے خوبصورت جسم کو بدنما بناسکتی ہے مگر عورت کے باطنی خوبصورتی جیسے اخلاق و انسانیت تہذیب و شائستگی ‘ کردار و فرمانبرداری و ایمانداری ‘ ایثار و قربانی یہ تمام باطنی خوبیاں اور خوبصورتیاں ہیں ۔جسے نہ دنیا بد نما بناسکتی ہے اور نہ ہی زمانہ اس کو مٹا سکتا ہے۔جناب اقبال الدین نے مزید کہا کہ دنیا میں عورت کا کردار اچھائی اور برائی دونوں سے تعلق رکھتا ہے۔دنیا خود اس بات کی گواہی دیتی ہے کہ عورت دنیا اور زمانے کیلئے مرکز ثقل رہی ہے ۔جس کے اطراف دنیا اور زمانہ گھومتے رہتے ہیں ۔اسلام ہی ایک ایسا مذہب ہے جو عورت کونہ صرف بلنددرجہ اور مقام عطا کیا بلکہ یہ ثابت کیا کہ عورت کا وجود باعث رحمت ہے نہ کہ زحمت ۔قوم کی پرورش میں مرد سے زیادہ عورت کا ہاتھ ہوتا ہے۔اس موقع پرممتاز عالمِ دین مولانا عتیق الرحمن رشادی بانی ناظم مدرسہ عربیہ نور الصفہ للبنات میلور بیدر نے بھی پُرمغز و پُراثر خطاب کیا۔مدرسہ ہذا کی طالبہ مفیرہ تکریم نے بھی خواتین اور اسلام عنوان پر پُر اثر خطاب کیا ۔مولانا محمد عتیق الرحمن رشادی کی دعا پرجلسہ تکمیل پذیر ہوا۔

TOPPOPULARRECENT