Sunday , August 20 2017
Home / مضامین / قونصل و ہیڈ آف چانسری محمد راغب قریشی کی الوداعی تقریب

قونصل و ہیڈ آف چانسری محمد راغب قریشی کی الوداعی تقریب

عارف قریشی
انڈین کلچرل سوسائٹی و بزم عثمانیہ جدہ ہندوستانی تارکین وطن کی پہلی قدیم تنظیم ہے جو پچھلے 40سالوں سے جدہ میں ہندوستان کے جشن آزادی اور جشن جمہوریہ تقریبات منعقد کررہی ہے۔ اس کے علاوہ یہ تنظیمیں قونصلیٹ جنرل آف انڈیا جدہ کے نئے سفارتکاروں کا خیرمقدم کرتی ہے اور جانے والے ڈپلومیٹ کے اعزاز میں الوداعی تقریب منعقد کرتی ہے۔پچھلے دنوں یہ تنظیمیں محمد راغب قریشی ہیڈ آف دی چانسری و قونصل ایجوکیشن و اسکول مبصر کے اعزاز میں الوداعی تقریب منعقد کی اور قونصلیٹ جنرل آف انڈیا جدہ کے نئے قونصل قونصلری آنند کمار کے اعزاز میں خیرمقدمی تقریب منعقد کی۔ صدرسوسائٹی و بزم عارف قریشی نے تمام معزز مہمانوں کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان ایک ایسا عظیم ملک ہے جہاں مختلف مذاہب کے ماننے والے اور مختلف زبانوں کے بولنے والے ہندو ، مسلم، سکھ، عیسائی مل جل کر زندگی گذارتے ہیں اور ایک دوسرے کے عید و تہواروں میں ایک دوسرے کو مبارکباد پیش کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم ہندوستانی اپنے وطن سے ہزاروں میل دور رہ کر بھی اپنے وطن کے کلچرل، تہذیب و بھائی چارگی کو نہیں بھولے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم 1976ء سے جدہ میں ہندوستان کی جشن آزادی و جشن جمہوریہ تقاریب شاندار پیمانے پر مناتے ہیں۔ اس طرح سے ہم اپنے ملک سے بہت دور حب الوطنی کا اظہار کرتے ہیں۔ ہم ہندوستانی ہیں ، ہندوستانی تھے اور آخری سانس تک ہم ہندوستانی ہی رہیں گے کیونکہ ہندوستان ہمارا ملک تھا ہمارا ملک ہے اور جب تک ہم زندہ رہیں گے ہمارا ملک ہی رہے گا۔
سرپرست انڈین کلچرل سوسائٹی ڈاکٹر دلشاد شمسینے کہا کہ ہم ہر سال اپنے ملک کے قومی دن پر جدہ میں شاندار پیمانے پر جشن مناتے ہیں، ہمارا مقصد اپنے وطن سے محبت اور حب الوطنی کا اظہار ہے اور مجاہدین آزادی کو ہم لوگ اسی طرح خراج عقیدت بھی پیش کرتے ہیں۔ ڈاکٹر صاحب نے محمد راغب قریشی ہیڈ آف چانسری کی خدمات کی تعریف کی اور کہا کہ قریشی صاحب نے اپنے تین سالہ دور میں انڈین اسکول کے مبصر کی حیثیت سے بہترین خدمات انجام دی ہیں اور انڈین کمیونٹی کے ساتھ ان کا تعاون ہمیشہ رہا ہے جس کی ہم دل سے عزت کرتے ہیں۔ اسٹیٹ بینک آف انڈیا جدہ کے جنرل منیجر برکت علی نے کہا کہ میں محمد راغب قریشی کی خدمات سے اچھی طرح واقف ہوں۔ وہ اپنی قابلیت اور تجربہ کی وجہ سے سارے جدہ کے انڈین اسکولس میں قابل تعریف کارنامے انجام دے رہے ہیں جس کو ہم ہمیشہ یاد رکھیں گے۔ قونصلیٹ جنرل آف انڈیا جدہ کے نئے قونصل قونصلری آنند کمار کو عارف قریشی نے اس شعر کے ساتھ خیرمقدم کرتے ہوئے مخاطب کرنے کیلئے کہا ۔
حیات لے کے چلو کائنات لے کے چلو
چلو تو سارے زمانے کو ساتھ لے کے چلو
نئے قونصل قونصلری نے سامعین سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ میں اپنی ہندوستانی کمیونٹی کو اپنے ساتھ لے کر چلنے اور میں ہندوستانی کمیونٹی کے ساتھ چلنے کیلئے جدہ آیا ہوں۔ آج آپ لوگوں کے جذبہ حب الوطنی کو دیکھ کر بے حد خوشی ہوئی۔ آج عارف قریشی صاحب کی رہائش گاہ پر جدہ کے تمام معزز مہمانوں کو جمع کرکے میرا خیرمقدم کیا جارہا ہے اور محمد راغب قریشی کے لئے الوداعی تقریب کی جارہی ہے، میں عارف قریشی کے جذبہ حب الوطنی کو سلام کرتا ہوں۔ وہ 40سالوں سے ہندوستان کے جشن آزادی اور جشن جمہوریہ کی تقریبات منعقد کررہے ہیں۔ میں عارف قریشی اور ان کی ٹیم کے ممبروں کے حب الوطنی کے جذبہ کی دل سے قدر کرتا ہوں اور یہ بھی کہنا چاہتا ہوں کہ میرے آفس کے دروازے ہر ہندوستانی کیلئے ہر وقت کھلے ہیں، میں ہندوستانیوں کے پرابلم اور مسائل حل کرنے آیا ہوں اور مجھے انڈین کمیونٹی کا تعاون چاہئے تاکہ ہمارے پریشان حال ہندوستانیوں کی مدد کی جاسکے اور ان کو راحت فراہم کرنا ہمارا فرض ہے۔
محمد راغب قریشی ہیڈ آف چانسری و قونصل ایجوکیشن و اسکول مبصر نے کہا کہ عارف قریشی صاحب کو پچھلے کئی سالوں سے میں جانتا ہوں، ان کے حب الوطنی کے جذبہ سے بھی اچھی طرح واقف ہوں اور ان کے حب الوطنی کے جذبہ کی میں دل سے قدر کرتا ہوں۔ پچھلے تین سال سے میں نے ان کے جشن آزادی ، جشن جمہوریہ کے تقاریب میں شرکت کررہا ہوں جو میرے لئے یادگار ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ انڈین کلچرل سوسائٹی و بزم عثمانیہ ہر سال انڈین اسکول جدہ کے طالب علموں سے کتابیں حاصل کرکے ان کتابوں کو ٹھیک ٹھاک کرکے ان طالب علموں میں ہزاروں کی تعداد میں مفت تقسیم کرتے ہیں یہ ایک بڑا کارنامہ ہے۔
انہوں نے مزید کہا کہ میں نے ایک ذمہ دار قونصل ایجوکیشن و اسکول مبصر کی حیثیت سے جو کچھ بھی کیا وہ میرا فرض تھا میں نے وہی کیا جس میں انڈین کمیونٹی کا فائدہ تھا۔ بہر حال انڈین اسکول میں داخلے کیلئے ہزاروں بچے پریشان حال پھرتے رہے ہیں، یہ دیکھ کر بڑا دکھ ہوتا تھا۔ بہرحال اللہ کے فضل و کرم سے ہم نے کافی بھاگ دوڑ کے بعد آخر کار ایک نئی عمارت اسکول کے لئے حاصل کرلی ہے۔ انشاء اللہ اس نئی عمارت میں تعلیم کا آغاز بہت جلد شروع ہوجائے گا اور طالب علموں اور والدین کی پریشانیاں بھی دور ہوجائیں گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ آج کی یہ شاندار تقریب مجھے ہمیشہ یاد رہے گی۔ انڈین کلچرل سوسائٹی و بزم عثمانیہ جدہ کی جانب سے محمد راغب قریشی کو ان کی شاندار کمیونٹی خدمات پر باوقار ’’ کمیونٹی سروس ایوارڈ‘‘ سے نوازا گیا۔ محمد راغب قریشی نے انڈین کلچرل سوسائٹی و بزم عثمانیہ جدہ کے کمیونٹی سروس سے متاثر ہوکر انہوں نے بھی اپنی جانب سے سوسائٹی و بزم کے صدر عارف قریشی اور سرپرست ڈاکٹر شمسی اور سوسائٹی و بزم کے ارکان کو جدہ میں کئی سالوں سے ہندوستان کا جشن آزادی اور جشن جمہوریہ کی تقریبات منعقد کرنے پر باوقار ’’ کمیونٹی سروس ایوارڈ ‘‘ سے نوازا۔ شاندار ڈِنر کے بعد شاندار اور یادگار کلچرل پروگرام پیش کیا گیا جس میں جدہ کے ممتاز گلوکاروں نے حصہ لیا۔  رات دیر گئے عارف مسعود صدیقی کے شکریہ پر یہ یادگار محفل کا اختتام عمل میں آیا۔

TOPPOPULARRECENT