Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / لاتور میں زعفرانی پرچم ہٹانے پر گڑبڑ ، ہجوم کا پولیس پر حملہ

لاتور میں زعفرانی پرچم ہٹانے پر گڑبڑ ، ہجوم کا پولیس پر حملہ

لاتور ۔ /21 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) مہاراشٹرا کے ضلع لاتور میں پان گاؤ دیہات میں شیو جینتی کے موقع پر متنازعہ مقام پر زعفرانی پرچم لہرانے پر اعتراض کی بنا ہجوم نے دو ملازمین پولیس کو بری طرح زدوکوب کیا ۔ یہ واقعہ /19 فبروری کوپیش آیا جس میں 57 سالہ ہیڈکانسٹبل یونس شیخ بری طرح زخمی ہوگئے ۔ پولیس نے بتایا کہ مقامی افراد کا ایک گروپ شیواجی نگر علاقہ میں واقع چوراہا پر جہاں پہلے سے ایک قدیم مسجد اور بدھ عبادت گاہ موجود ہے ، شیواجی کا مجسمہ اور پرچم نصب کرنے کی کوشش کررہا تھا ۔ اس سے پہلے بھی یہاں شیوجینتی کے موقع پر تنازعہ کھڑا ہوتا رہا ۔ /18 فبروری کی شب یونس شیخ اور ایک دیگر کانسٹبل نے اس مقام کا دورہ کیا اور عوام سے خواہش کی کہ وہ زعفرانی پرچم ہٹادیں ۔ چنانچہ پرچم یہاں سے ہٹادیا گیا لیکن دوسرے دن صبح تقریباً 100 افراد پر مشتمل ہجوم نے پان گاؤ پولیس چوکی پر حملہ کرکے توڑ پھوڑ مچائی ۔ یونس کے ساتھی فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے جبکہ ہجوم نے یونس کو گھسیٹ کر باہر لایا اور اس متنازعہ مقام پر لے گئے جہاں سے انہوں نے پرچم ہٹانے کیلئے کہا تھا یہاں بھی انہیں زدوکوب کا نشانہ بنایا گیا ۔

TOPPOPULARRECENT