Thursday , September 21 2017
Home / سیاسیات / لالو پرساد کو شیطان قرار دینے پر مودی کیخلاف آر جے ڈی کا احتجاج

لالو پرساد کو شیطان قرار دینے پر مودی کیخلاف آر جے ڈی کا احتجاج

الیکشن کمیشن سے شکایت، توہین آمیز ریمارک کرنے پر فوری کارروائی کرنے پر زور
پٹنہ ۔9 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) صدر آر جے ڈی لالو پرساد یادو کے خلاف وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے استعمال کردہ توہین آمیز اور قابل مذمت زبان پر آر جے ڈی نے احتجاج کرتے ہوئے الیکشن کمیشن سے شکایت کی ہے۔ الیکشن کمیشن سے رجوع ہوتے ہوئے آر جے ڈی نے کہا کہ لالوپرساد کو شیطان قرار دینے کے خلاف کارروائی کی جائے۔ آر جے ڈی مزید کہا کہ وزیراعظم نے لالو پرساد اور یادو طبقہ کے خلاف توہین آمیز زبان کا استعمال کرتے ہوئے تضحیک کی ہے۔ آر جے ڈی نے ریاست کے چیف الیکٹورل آفیسر اجئے نائک کو شکایت پیش کرتے ہوئے کہا کہ مودی نے آر جے ڈی صدر کے تعلق سے کہا تھا کہ ہمارا مقابلہ شیطان سے ہے۔ لہٰذا الیکشن کمیشن مودی کے خلاف کارروائی کریں۔ آر جے ڈی کے ترجمان منوج جھا اور ان کے ہم منصب چترنجن گگن نے 9 اکٹوبر کو لکھی گئی شکایت میں چیف الیکشن کمشنر آف انڈیا سے کہا ہے کہ وہ مودی کے ریمارک کا نوٹ لیں۔

اس نے اپنے مکتوب میں الزام عائد کیا کہ وزیراعظم نے نہایت ہی گھٹیا زبان کا استعمال کیا ہے۔ کل بہار میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے مودی نے دانستہ طور پر لالو کے خلف گمراہ کن اور بے بنیاد الزامات عائد کئے۔ ناصرف انہوں نے آر جے ڈی لیڈر پر کیچڑ اچھالا بلکہ ان کی ذات کو بھی نشانہ بناتے ہوئے توہین کی ہے۔ یہ ریمارک ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی میں آتا ہے۔ شکایت مکتوب میں الزام عائد کیا گیا ہے کہ وزیراعظم کے شرپسندانہ اور توہین آمیز تقاریر آرٹیکل 153 کے یکسر مغائر ہیں۔ آر جے ڈی الیکشن کمیشن پر زور دیتی ہے کہ وزیراعظم کی تقاریر کی ویڈیو کلپس کا مشاہدہ کریں اور اخبارات کا مطالعہ کریں۔ آر جے ڈی شکایت میں کہا کہ اس طرح کے ریمارکس سے سیاسی فضاء مکدر ہوتی ہے اور آزادانہ انتخابات کا تصور فوت ہوتا ہے۔

TOPPOPULARRECENT