Friday , September 22 2017
Home / دنیا / لاٹری کی رقم کا نصف حصہ سابق بیوی کو ادا کرنے عدالت کا حکم

لاٹری کی رقم کا نصف حصہ سابق بیوی کو ادا کرنے عدالت کا حکم

بیجنگ ۔ 15 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک چینی شخص جس نے 7 لاکھ ڈالرس کی خطیر رقمی لاٹری جیتی، اس نے ایک عجیب و غریب حرکت کرتے ہوئے اپنی بیوی کو طلاق دیدی لیکن عدالت نے بھی انصاف کا تقاضہ پورا کرتے ہوئے اس سے کہا کہ طلاق تو منظور تو ہوجائے گی لیکن اسے اپنی لاٹری کی رقم کا نصف حصہ اپنی سابقہ بیوی کو ادا کرنا پڑے گا۔ لیوژیانگ نامی شخص کے بارے میں یہ کہا جارہا تھا کہ اس کے کسی دیگر خاتون نے سے بھی تعلقات ہیں لیکن قسمت کو کچھ اور ہی منظور تھا۔ جاریہ سال 26 فبروری کو اسے 4.6 ملین یوان (7 لاکھ ڈالرس) کی لاٹری اپنی سابقہ بیوی کو طلاق دینے کے صرف ایک روز بعد لگی۔ اس نے فوری اپنی سابقہ بیوی یوان لی سے طلاق کا مطالبہ کیا اور کہا کہ اس طرح دونوں میاں بیوی پر 250,000 یوان کا جو قرض ہے وہ بھی ادا ہوجائے گا۔ لی نے کہا کہ اس کے پاس طلاق کے کاغذات پر دستخط کرنے کے علاوہ کوئی دوسرا راستہ نہیں تھا۔ دریں اثناء لی کو یہ معلوم ہی نہیں ہوسکا کہ اس کے سابقہ شوہر کو لاٹری لگی ہے۔ جب لی کے دوستوں نے اسے مبارکباد دی تو اسے لاٹری جیتنے کے بارے میں معلوم ہوا اور اس نے فوری عدالت کا دروازہ کھٹکھٹاتے ہوئے لاٹری کی رقم میں سے نصف رقم اسے ادا کئے جانے کا مطالبہ کیا اور استدلال پیش کیا کہ اس کے شوہر نے لاٹری کا ٹکٹ اس وقت خریدا تھا جب دونوں ساتھ تھے۔

TOPPOPULARRECENT