Monday , September 25 2017
Home / کھیل کی خبریں / لاہور میں فائنل منعقد کرنے کے فیصلے سے سابق کھلاڑی مسرور

لاہور میں فائنل منعقد کرنے کے فیصلے سے سابق کھلاڑی مسرور

کراچی ۔21 فروری (سیاست ڈاٹ کام ) پاکستان سوپر لیگ کے لاہور میں فائنل کے فیصلے پرسابق کھلاڑی کافی خوش ہوگئے ہیں ۔ سابق کپتان رمیز راجہ نے کہا ہے کہ یہ پی سی بی کا اچھا فیصلہ ہے جس سے شائقین کو اپنی سرزمین پر میچ دیکھنے کا موقع ملے گا۔ ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ فائنل میں شاید اس سال زیادہ بیرونی کھلاڑی شامل نہ ہوں لیکن آئندہ غیر ملکی کھلاڑیوں کی تعداد بڑھ جائے گی۔ ملک میں بم دھماکوں کی وجہ سے گزشتہ پندرہ دنوں میں باہر کچھ اچھا تاثر نہیں گیا لیکن ٹورنمنٹ کا آخری میچ یہاں کروانے کا فیصلہ قابل تحسین ہے۔سابق فاسٹ بولر شعیب اختر نے کہا کہ اگر بیرونی کھلاڑی پاکستان نہیں بھی آتے تو بھی یہ ملک کا یادگار اور بڑا فیسٹول ثابت ہو گا اور لوگ جوق در جوق اسٹیڈیم میں آئیں گے۔ اگر کوئی سوچتا ہے کہ پی ایس ایل غیر ملکی کھلاڑیوں کی موجودگی میں بڑا ایونٹ ہے تو یہ بہت بڑی غلط فہمی ہوگی کیونکہ پی ایس ایل پاکستان میں منعقد ہو تو مقامی کھلاڑیوں کے ساتھ یہ بڑا فیسٹول بن جائے گا۔انہوں نے کہا کہ جہاں پی سی بی کو تنقید کا نشانہ بنایا جاتا ہے تو اچھے کاموں پر اس کی تعریف بھی کرنا چاہئے اور ٹورنمنٹ کے فائنل سے متعلق پی سی بی نے اچھا اقدام اٹھایا ہے۔شعیب اختر نے کہا کہ اگر پی سی بی پاکستان سوپر لیگ یہاں کرا دے تو پھر ملک میں اس سے بڑا فیسٹول نہیں ہوگا۔ سابق کپتان شاہد آفریدی نے کہا کہ اپنے مقامی کھلاڑیوں کے ساتھ بھی فائنل لاہور میں کھیلا جا سکتا ہے لیکن پی ایس ایل کی حمایت کرنے والے غیر ملکی کھلاڑیوں سے وہ پاکستان آنے کی درخواست کریں گے۔ فائنل لاہور میں کروانے کا مقصد ملک میں بین الاقوامی کرکٹ کی واپسی ہے اور وہ ٹورنمنٹ کے آخری میچ کے اپنے ملک میں انعقاد کیلئے دعاگو ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کرکٹ بورڈ کو صورتحال دیکھنا چاہئے اور اگر معاملات ٹھیک نہ ہوں تو دیگر راستہ بھی موجود ہیں۔

TOPPOPULARRECENT