Tuesday , October 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / لب سڑک واقع مدارس جان لیوا

لب سڑک واقع مدارس جان لیوا

کوڑنگل 29 ۔ اکٹوبر ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) حلقہ اسمبلی کوڑنگل کے بیشتر مقامات پر واقع سرکاری مدارس لب سڑک واقع ہونے سے طلباء حادثات کا شکار ہوتے جارہے ہیں ۔ موجودہ طور پر شاہراہوں کی کشادگی کی بدولت قومی ہیکل لاریاں ، آر ٹی سی بسیں ، جیپ گاڑیاں اور موٹر سیکلیں وغیرہ برق رفتاری سے ایک دوسرے پر سبقت لے جاتی ہوئہی گزرتی رہتی ہیں ۔ کمسن طلباء ان کی زد میں آجانے کے قوی امکانات پائے جاتے ہیں ۔ اولیائے طلباء بچوں کو اسکول بھجوانے کیلئے خوف و ہراس محسوس کررہے ہیں ۔ بعض اوقات طلباء حادثات میں اپنی قیمتی زندگیاں بھی گنواچکے ہیں ۔اس کے باوجود بھی ان مدارس کیلئے بانڈوری وال کی تعمیر نہ کرنا فہم و قیاس سے بالاتر ہے ۔ لاکھوں روپئے کی لاگت سے اسکولی عمارتوں کی شایان شان تعمیر تو عمل میں لائی گئی مگر باؤنڈری وال نہ ہونے سے حادثات کی رونمائی ہورئی ہے ۔ اساتذہ اور متعلقہ عہدیداران ذمہ داری کو محسوس کرتے ہوئے باؤنڈری وال کی تعمیر کا انتظام کریں تو بہت حد تک حادثات کا تدارک ہوسکتا ہے۔ کوڑنگل منڈل میں روال پلی اسکول لب سڑک واقع ہے جس سے روزانہ طلباء سڑک پر آتے رہتے ہیں ۔ اس طرح کوڑنگل مستقر پر بھی بیشتر مدارس لب سڑک واقع ہونے سے حادثات کا گہوارہ بنے ہوئے ہیں ۔ سال گزشتہ گاندھی نگر اسکول کا طالب علم اسکول سے متصل سڑک پر آنے سے برق رفتار لاری کی زد میں آگیا جس سے لڑکے کا پیر مکمل ٹوٹ گیا ۔ اسی طرح موضع پرساپور مقام پر بھی سابق میں بھی کمسن طالب علم سڑک پر آجانے سے تیزی سے گزرنے والی لاری کے پہیوں میں آجانے سے برسرموقع موت واقع ہوگئی ۔ اسی طرح کوڑنگل منڈل میں کستور پلی ، حسن آباد ، گنڈلہ گنٹہ وغیرہ مقامات کے اسکولس بھی لب سڑک واقع ہیں ۔ کوسگی ، دولت آباد ، مدور اور ممبرس پیٹھ وغیرہ منڈلوں کے بیشتر مدارس کی بھی یہی صورتحال ہے ۔ اولیائے طلباء عوامی قائدین و عہدیداران بالا سے ملتمس ہیں کہ لب سڑک واقع مدارس کیلے باؤنڈری وال کی تعمیر کا انتظام کرتے ہوئے طلباء کو حادثات سے محفوظ رکھنے کا بندوبست کریں۔

TOPPOPULARRECENT