Friday , August 18 2017
Home / دنیا / لندن میں اسلام مخالف جرائم میں 70 فیصد اضافہ

لندن میں اسلام مخالف جرائم میں 70 فیصد اضافہ

لندن ۔ 7 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) ایک میڈیا رپورٹ کے مطابق گذشتہ سال لندن میں مسلمانوں کے خلاف نفرت انگیز جرائم کے تناسب میں 70 فیصد اضافہ ہوا۔ میٹرو پولیٹن سرویس کی جانب سے جاری کئے گئے ایک ڈیٹا میں ماہ جولائی تک 12 مہینوں کا احاطہ کیا گیا ہے جس میں اسلام سے نفرت کا اظہار کرنے والے جرائم کی تعداد 816 بتائی گئی ہے جبکہ گذشتہ سے پیوستہ سال میں یہی تعداد 478 تھی۔ ان جرائم کو اسلاموفوبیا (مذہب اسلام کا خوف) سے تعبیرکیا جارہا ہے اور اس نوعیت کے حملوں پر نظر رکھنے والی ایک تنظیم ماما (MAMA) کا کہنا ہے کہ مسلمان خواتین کو ترجیحی طور پر نشانہ بنایا جاتا ہے۔ اس تنظیم کے ڈائرکٹر فیاض مغل نے بتایا کہ سڑکوں سے گذرنے والی ایسی خواتین جو برقعہ، حجاب یا اسکارف پہنے ہوتی ہیں، انہیں شرپسند نشانہ بناتے ہیں۔ ایسی خواتین کو سائبر کرائم یعنی سوشیل میڈیا کی ویب سائیٹس کے ذریعہ انتہائی فحش گالیوں اور تبصروں کا سامنا کرنا پڑتا ہے یا پھر کبھی کبھی معاملہ تشدد بھی اختیار کرلیتا ہے۔ سب سے زیادہ واقعات لندن کے جنوب مغربی علاقہ میرٹون میں پیش آئے جہاں ان کی تعداد صرف دیڑھ سال میں 8 سے بڑھ کر 29 ہوگئی جو 263 فیصد اضافہ ہے۔

TOPPOPULARRECENT