Monday , October 23 2017
Home / Top Stories / لنگایت طبقہ آزاد مذہب ، ہندو دھرم سے غیر مربوط کرنیکا مطالبہ

لنگایت طبقہ آزاد مذہب ، ہندو دھرم سے غیر مربوط کرنیکا مطالبہ

بیدر میں ریلی ، لنگایت طبقہ ویدوں کو نہیں مانتا ، کئی دیوی دیوتاؤں پر نہیں بلکہ ایک دیوتا پر یقین رکھتا ہے ، دھرم گروؤں کا خطاب

بیدر ۔ /22 جولائی (سیاست ڈاٹ کام) کرناٹک میں سیاسی و سماجی اعتبار سے طاقتور لنگایت طبقہ کے تقریباً دو لاکھ افراد آج یہاں سڑکوں پر نکل آئے اور لنگایت برادری کو ہندو دھرم سے غیرمربوط کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ لنگایت، ہندو دھرم سے الگ ایک آزاد مذہب ہے ۔ کرناٹک میں سیاسی اعتبار سے نمایاں لنگایت برادری نے بیدر کے نہرو میدان پر بڑی ریلی ’لنگایت دھرما ۔ سواتنترا دھرما ‘ (لنگایت مذہب ۔ آزاد مذہب ) کے زیرعنوان منظم کی ۔ مقررین نے اپنے خطاب کے دوران اس دھرم کے اہم خدوخال پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہ ایک الگ اور آزاد مذہب ہے اور لنگایت طبقہ کو ہندو دھرم سے الگ ایک آزاد موقف دیا جانا چاہئیے ۔ لنگایت برادری کی ممتاز مذہبی شخصیت ماتے مہادیوی نے کہا کہ ’’لنگایت ہندو یا ہندوؤں کا کوئی ذیلی طبقہ یا فرقہ نہیں ہیں بلکہ ایک آزاد دھرم ہے ‘‘ ۔ مہاراشٹرا سے تعلق رکھنے والے لنگایت دھرم گرو شیوا لنگم شیوا چاریہ نے کہا کہ ’’لنگایت مت ایک آزاد دھرم ہے ، جو 12 ویں صدی عیسوی میں سنت بشیشورا نے قائم کیا تھا ۔ ’’ یہ کبھی بھی ہندو دھرم کا حصہ نہیں رہا بلکہ بعض موقعوں پر ہندو دھرم کے خلاف جدوجہد بھی کیا ہے ‘‘ ۔ کوڈلا سنگما مٹھ کے جگت گرو پنچم شالی نے کہا کہ ’’ہم آزاد مذہب کا موقف چاہتے ہیں ۔ چیف منسٹر کو اس ضمن میں سفارش کرنا چاہئیے ‘‘ ۔ اس ریلی کے منتظمین ، طبقہ کے سرکردہ قائدین ، مذہبی پیشواؤں ، مٹھوں کے سربراہان اور شرکاء نے چیف منسٹر سدارامیا کے نام ایک یادداشت بیدر کے ڈپٹی کمشنر کو پیش کی ۔ احتجاج میں شریک لنگایت دھرم گروؤں نے کہا کہ ’’اگر کوئی ہندو ہے تو اس کو ویدک رسوم اختیار کرنا چاہئیے اور جو ویدوں سے انکار کرتے ہیں وہ ہندو نہیں بلکہ غیر ہندو (آریدیکا) ہوتے ہیں ۔ مثال کے طور پر بدھ مت کے پیرو ویدوں کو مسترد کرتے ہوئے اپنی مقدس باتوں پر عمل کرتے ہیں ۔ ویدوں کو نہ ماننے والوں کو غیرہندو کہا جاتا ہے اور یہی اصول مانا جائے تو اس اعتبار سے لنگایت بھی ویدوں کو مسترد کرچکے ہیں اور کنٹرا واچن قبول کرچکے ہیں۔ چنانچہ انہیں بھی غیرہندووں کی حیثیت سے تسلیم اور قبول کیا جانا چاہئیے ۔ بسوا لنگاپٹہ دیورو نے کہا کہ ’’ویدوں کا دھرم واضح طور پر کئی بتوں کی پرستش کرتا ہے ۔ وید ماننے والے افراد کا یقین ہے کہ 33 کروڑ دیو اور دیویاں ہیں جن کے منجملہ صرف 33 نمایاں اہمیت کے حامل ہیں ۔ اس کے برخلاف لنگایت صرف ایک معبود لنگا کو مانتے ہیں اور لنگا کو ایسا دیوتا تصور کرتے ہیں جس کی کوئی شکل نہیں ۔ چنانچہ لنگایت کسی بھی اعتبار سے ہندو نہیں ہوسکتے ۔

TOPPOPULARRECENT