Sunday , June 25 2017
Home / کھیل کی خبریں / لن ڈان ‘ آل انگلینڈ اوپن سے باہر ‘ سیمی فائنل میں شکست

لن ڈان ‘ آل انگلینڈ اوپن سے باہر ‘ سیمی فائنل میں شکست

غیرمعروف ساتھی چینی کھلاڑی کے ہاتھوں ہزیمت ۔ ملیشیا کے لی چونگ وئی بھی فائنل میں پہونچ گئے

برمنگھم 12 مارچ ( سیاست ڈاٹ کام ) تین مرتبہ کے اولمپک چمپئن لن ڈان آل انگلینڈ اوپن میں اپنے مینس سنگلز خطاب سے محروم ہوگئے ہیں جبکہ انہیں سیمی فائنل میں اپنے ساتھی چینی کھلاڑی شی یوگی کے مقابلہ میں شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ لن ڈان کو بیڈمینٹن میں سب سے عظیم ترین کھلاڑی سمجھا جاتا ہے ۔ حالانکہ انہوں نے چین کے شی یوگی کے خلاف پہلے سیٹ میں قدرے مزاحمت بھی کی تھی اور 20 – 18 کے اسکور پر واپسی کی کوشش کی تھی لیکن یہ گیم وہ 24 – 22 سے ہار گئے ۔ اس کے بعد دوسرے گیم میں وہ کہیں بھی مقابلہ میں نظر نہیں آئے اور اپنا روایتی کھیل پیش کرنے میں ناکام رہے ۔ اس گیم میں انہیں 21 – 10 کے بڑے فرق سے شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ شی یوگی ایک غیر معروف کھلاڑی ہیں اور عالمی سطح پر ان کی رینکنگ بھی کوئی خاص نہیں ہے ۔ لن ڈان کی اس شکست کے بعد آل انگلینڈ ٹورنمنٹ کے فائنل میں ایک بار پھر دو عظیم کھلاڑیوں کے مقابلہ کی امید ختم ہوگئی ہے ۔ امید کی جا رہی تھی کہ فائنل میں لن ڈان کا ملیشیا کے موجودہ عالمی نمبر ایک اسٹار 34 سالہ لی چونگ وئی سے ہوگا جو پہلے ہی فائنل میں پہونچ چکے ہیں۔ لن ڈان نے اس شکست کے بعد اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ ان کی حالت ٹھیک نہیں ہے حالانکہ وہ اس سے پہلے کے مقابلہ میں وکٹر اکسیلسن کو شکست دینے کے بعد بہتر حالت میں نظر آئے تھے ۔ وکٹر ڈنمارک کے ورلڈ سوپر سیریز چمپئن ہیں۔ لن ڈان نے کہا کہ 33 سال کی عمر میں بھی انہوں نے اس سطح پر جس کھیل کا مظاہرہ کیا ہے وہ ان کیلئے قابل فخر ہے ۔

چار مرتبہ کے چمپئن ملیشیا کے لی چونگ وئی سیمی فائنل میں تائیوان کے چن ٹئین چین کو 10 – 21, 21 – 14, 21 – 9 سے شکست دینے کے بعد فائنل میں پہونچے ہیں۔ انہیں پہلے گیم میں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا ۔ پہلے گیم میں پچھڑ جانے کے بعد انہوں نے میچ میں شاندار واپسی کی اور دوسرے اور تیسرے گیم کو اپنے نام کرتے ہوئے فائنل میں رسائی حاصل کی ۔ اس ٹورنمنٹ سے قبل بھی مشکلات کا شکار رہے تھے ۔ وہ زخمی ہوگئے تھے اور پھر انہوں نے ریٹائرمنٹ کا اعلان بھی کردیا تھا ۔ انہوں نے ماضی میں بھی تین مرتبہ سبکدوشی کے منصوبوں کا اشارہ دیا تھا لیکن ہر بار منسوخ کردیا ۔ لی چونگ وئی نے کہا کہ وہ آئندہ سال بھی مقابلہ کرینگے جب ان کی عمر 35 سال ہوجائیگی ۔ اس دوران وہ آل انگلینڈ خطاب کیلئے پسندیدہ دعویدار بن گئے ہیں اور اس بار اگر انہیں کامیابی ملتی ہے تو یہ ان کا چوتھا خطاب ہوگا ۔ لی چونگ نے کہا کہ وہ ابھی بھی پوری طرح سے اپنے زخم سے صحتیاب نہیں ہوئے ہیں ۔ ان کے بائیں ٹخنے میں زخم ہے جو گذشتہ مہینے میں کوالا لمپور میں ایک بیڈمینٹن میٹ سے لگا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ وہ صرف اپنے آپ پر توجہ دے رہے ہیں اور جو کچھ کرسکتے ہیں کر رہے ہیں۔ وہ صرف یہاں محظوظ ہونے آئے ہیں۔ آل انگلینڈ خطاب کا خواتین کا فائنل تائیوان کی ٹاپ سیز ایزو انگ اور تھائی لینڈ کی رٹچانوک انٹانون کے مابین ہوگا ۔ انٹانون آل انگلینڈ میں سب سے کم عمر چمپئن رہنے کا اعزاز بھی رکھتی ہیں۔ انہوں نے 18 سال کی عمر میں یہ خطاب جیتا تھا ۔ وہ چار سال بعد ایک بار پھر خطاب کیلئے جدوجہد کرینگی حالانکہ اس ٹورنمنٹ سے قبل انہیں بھی مسائل کا سامنا رہا اور وہ بھی زخم ہوگئی تھیں۔ وہ صحتیاب ہوتے ہوئے اس ٹورنمنٹ میں حصہ لے رہی ہیں۔ انہوں نے دوسرے راونڈ میں کافی پیچھے ہوجانے کے بعد زبردست مزاحمت کرتے ہوئے اپنے مقابلے جیتے ہیں اور فائنل تک رسائی حاصل کی ہے ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT