Thursday , August 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / لون میلہ میں بنک عہدیداروں کی من مانی

لون میلہ میں بنک عہدیداروں کی من مانی

کاماریڈی:21؍ اپریل ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) اقلیتی طبقہ سے تعلق رکھنے والے بے روز گار نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی کیلئے قرضہ جات فراہم کرنے کیلئے اقلیتی مالیاتی کارپوریشن ، بلدیہ کاماریڈی کی جانب سے مشترکہ طور پر منعقدہ لون میلہ میں عہدیداروں اور بینک عہدیداروں کی من مانی پر نائب صدرنشین ضلع وقف کمیٹی سید انور احمد نے شدید احتجاج کرتے ہوئے ضلع کلکٹر ڈاکٹر یوگیتا رانا سے نمائندگی کرتے ہوئے انٹرویو کو باقاعدہ طور پر منعقد کرنے کا مطالبہ کیا۔ تفصیلات کے بموجب بے روزگار اقلیتی طبقہ سے تعلق رکھنے والے نوجوانوں کو روزگار سے جوڑنے کیلئے آج میونسپل کاماریڈی کی جانب سے انٹرویوز کا انعقاد عمل میں لایا گیا تھا جس میں آن لائن کے ذریعہ درخواست گذاری کرنے کی ہدایت دی گئی تھی اور درخواست گذاروں نے آن لائن میں درخواست گذاری بھی کی تھی لیکن چند امیدواروں کے مکانات کے علاقوں میں بینکس نہ ہونے کی وجہ سے بینک عہدیداروں نے درخواستوں کو قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے درخواستوں کو مسترد کردیاجس کی اطلاع انوراحمد نائب صدرنشین ضلع وقف کمیٹی اور تلگودیشم حلقہ کے انچارج محمد عثمان کو ملنے پر تفصیلات حاصل کیا تو بینک عہدیداروں نے بتایا کہ ہر بینک کے تحت 5 وارڈوں کو مختص کیا گیا تھا جن امیدواروں کے نام ان پانچ وارڈوں سے ہٹ کر ہے ان کے درخواستیں قبول نہیں کیا جائیگاجس پر انہوں نے تعجب کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وارڈوں سے کوئی تعلق نہیں ہے صرف قرض فراہم کرنا حکومت کا مقصد ہے لیکن بینک عہدیدار حکومت کے مقصد کو ناکام بنانے میں منصوبہ بند طریقہ سے کام کررہی ہے اس وقت ضلع کلکٹر بھی میونسپل گیسٹ ہائوز میں موجود تھے جس پر انہوں نے ضلع کلکٹر کے پاس پہنچ کر تحریری طور پر نمائندگی کی اور انٹرویو کو باقاعدہ منعقد کرتے ہوئے بیروزگاروں کو قرضہ جات فراہم کرنے کا مطالبہ کیا بصورت دیگر احتجاج کرنے کا ارادہ ظاہر کیااور اس خصوص میں قانون ساز کونسل کے اپوزیشن لیڈر محمد علی شبیر سے بھی نمائندگی کرنے کا ارادہ ظاہر کیا۔

TOPPOPULARRECENT