Friday , August 18 2017
Home / جرائم و حادثات / لڑکیوں کا استحصال کرنے والا دھوکہ باز گرفتار

لڑکیوں کا استحصال کرنے والا دھوکہ باز گرفتار

حیدرآباد /23 اکٹوبر ( سیاست نیوز ) حیدرآباد سٹی پولیس کی شی ٹیم نے سائبر کرائم پولیس کی مدد سے ایک دھوکہ باز کو گرفتار کرلیا جو خود کو ایجوکیشن کنسلٹنٹ ظاہر کرتے ہوئے لڑکیوں سے دست درازی اور ان کا جنسی استحصال کر رہا تھا ۔ ایڈیشنل کمشنر آف پولیس کرائم شریمتی سواتی لکرا نے بتایا کہ 33 سالہ کے مدھو عرف سرینواس عرف سنتوش جو فوڈ کارپوریشن آف انڈیا کا معطل شدہ ملازم ہے وہ ایجوکیشن کونسلنگ کے نام پر غیر شادی شدہ لڑکیوں سے دست درازی کرنے کا منصوبہ تیار کیا ۔ جس کے تحت اس نے کتہ پیٹ علاقہ میں واقع انڈین انٹرنیٹ پوائنٹ پہونچکر انٹرمیڈیٹ ، ایس ایس سی اور او یو سیٹ انٹرنس امتحانات میں شرکت کرنے والے امیدواروں کی تفصیلات کا پتہ لگایا  اور 5000 لڑکیوں کا رجسٹر میں ایک ریکارڈ تیار کیا ۔ انٹرنیٹ پر موجود موبائل فون نمبرات سے اس نے سینکڑوں لڑکیوں سے فون پر ربط کیا اور انہیں کونسلنگ کے بہانے سری رام نگر ، بنڈلہ گوڑہ ، ناگول اور دیگر علاقوں کو طلب کیا اور اپنے کرائے کے مکان میں لے جاکر ان سے دست درازی کی اور ان کا جنسی استحصال کرنے کی کوشش کی ۔ مدھو لڑکیوں سے دست درازی کے بعد انہیں اس بات کو پوشیدہ رکھنے کا انتباہ دیا کرتا تھا اور اگر اس سلسلے میں کارروائی کرنے پر سوشیل میڈیا کے ذریعہ ان کی تصاویر عام کرنے کی دھمکی دیا کرتا تھا ۔ خوف زدہ لڑکیاں اس سلسلے میں شکایت درج کرانے میں گریز کیا کرتی تھی ۔ شریمتی سواتی لکرا نے بتایا کہ لڑکیوں سے فون پر رابطہ کرنے کیلئے مدھو نے بی مہیشوری کے آدھار کارڈ اور دیگر دستاویزات کا غیر مجاز استعمال کرتے ہوئے سیکڑوں سم کارڈ حاصل کیا ۔ شی ٹیم اور سائبر کرائم پولیس نے مدھو کا کامیاب طور پر پتہ لگاتے ہوئے اسے گرفتار کرلیا اور اس کے قبضہ سے 19 موبائل فونس رجسٹرس ، کمپیوٹر اور دیگر اشیاء برآمد کرلیا ۔

TOPPOPULARRECENT