Wednesday , October 18 2017
Home / ہندوستان / لکھنؤ میں مسلم راشٹریہ منچ کے پرچم تلے علماء کانفرنس

لکھنؤ میں مسلم راشٹریہ منچ کے پرچم تلے علماء کانفرنس

لکھنؤ ۔ 7 اگست (سیاست ڈاٹ کام) آر ایس ایس کی حمایت یافتہ مسلم تنظیم مسلم راشٹریہ منچ کے پرچم تلے تشدد اور دہشت گردی کے خلاف ایک علماء کانفرنس کل منعقد کرے گی، حالانکہ کل ہند مسلم پرسنل لاء بورڈ اور جمعیۃ العلماء ہند نے فیصلہ کیا ہیکہ وہ اس کانفرنس میں شرکت نہیں کریں گے۔ کنوینر مسلم راشٹریہ منچ محمد افضل نے کہا کہ کل ہند علماء کانفرنس کل منعقد کی جارہی ہے۔ اس کے موضوعات فسادات، دہشت گردی، مظالم اور تشدد سے پاک ہندوستان ہوں گے۔ ہمارے علماء امن اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی اپیل کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ علماء چاہتے ہیں کہ مذہب کے نام پر ملک میں کوئی فساد نہ ہو۔ افضل نے کہا کہ بھارت توڑو آندولن (ہندوستان چھوڑ دو تحریک) 9 اگست 1942ء کو شروع کی گئی تھی۔ ان ہی خطوط پر کانفرنس تشدد چھوڑو، دہشت گردی چھوڑو اور فسادات چھوڑو کی اپیل کررہی ہے۔ انہوں نے پرزور انداز میں کہا کہ فرقہ وارانہ فسادات مسلمانوں کی پسماندگی کی ایک بہت بڑی وجہ ہے، ہر فساد کے بعد غریب مسلمان مزید نظرانداز کئے جاتے ہیں۔ ہم پورے ملک اور وزیراعظم نریندر مودی سے کہنا چاہتے ہیں کہ متحدہ طور پر ملک کی ترقی کے لئے جدوجہد کرنے کا وقت آگیا ہے۔ امن اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی ہوگی تو پسماندہ مسلمان بھی اصل دھارے میں شامل ہوجائیں گے اور ملک کی ترقی کے لئے کام کریں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایک تجویز اس سلسلہ میں کانفرنس میں منظور کی جائے گی اور اس کی نقل وزیراعظم کو روانہ کی جائے گی۔ انہوں نے کہاکہ مختلف مسلم تنظیموں اور اداروں کے علماء بشمول پرسنل لاء بورڈ، کل ہند شیعہ پرسنل لاء بورڈ، مدرسہ کے اساتذہ اور ائمہ مساجد کو بھی اس تجویز کی نقلیں روانہ کی جائیں گی۔ آر ایس ایس کے ساتھ ایم آر ایم کے تعلقات کے بارے میں سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اندریش سنگ کی مجلس عاملہ کے رکن ہیں۔ وہ ادارہ کے سرپرست ہیں اور کانفرنس میں شرکت کریں گے۔ دریں اثناء مسلم پرسنل لاء بورڈ کے ترجمان عبدالرحیم قریشی نے کہا کہ ایم آر ایم کا دعوت نامہ وصول ہوچکا ہے، تاہم بورڈ کی جانب سے کانفرنس میں کوئی شرکت نہیں کرے گا، جب کہ ریاستی صدر جمعیتہ العلماء ہند مولانا ارشد راشدی نے کہا کہ کانفرنس میں شرکت کا سوال ہی پیدا نہیں ہوتا۔

TOPPOPULARRECENT