Wednesday , August 23 2017
Home / جرائم و حادثات / لکھنؤ میں گرفتار مشتبہ شخص حیدرآباد منتقل

لکھنؤ میں گرفتار مشتبہ شخص حیدرآباد منتقل

حیدرآباد۔  4فروری ( سیاست نیوز) حیدرآباد سٹی پولیس کی اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم (ایس آئی ٹی) نے لکھنؤ ایرپورٹ پر گرفتار عبدالعزیز عرف گڈا عزیز کو حیدرآباد منتقل کردیا ۔ اعلیٰ ذرائع نے بتایا کہ سعودی عرب میں گرفتار عزیز کو سعودی حکام نے ہندوستان واپس بھیج دیا جس پر اترپردیش کی اے ٹی ایس نے اسے گرفتار کرکے ایس آئی ٹی کے حوالے کردیا ۔ کل عبدالعزیز کو ایس آئی ٹی نامپلی کریمینل کورٹ میں پیش کرے گی ۔ واضح رہے کہ29 جولائی سال 2001ء میں عبدالعزیز کو ایس آئی ٹی نے اس کے دو ساتھی نثار احمد اور عبدالہادی عرف زاہد کو گرفتار کیا تھا اور اس کے قبضہ سے بلجیم کے ریوالور کو برآمد کیا تھا۔ ایس آئی ٹی نے عزیز کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ 120 B (مجرمانہ سازش)، 153(A) (فرقہ وارانہ منافرت پھیلانا) انڈین آرمس ایکٹ کے علاوہ پاسپورٹ ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کیا تھا۔ عزیز کی ضمانت پر رہائی کے بعد اسے سال 2004ء میں سکندرآباد سدی ونائیک مندر کو مبینہ طور پر دھماکہ سے اُڑادینے کے ایک کیس میں ماخوذ کیا تھا اور اس کیس کی تحقیقات کرائم انوسٹی گیشن ڈپارٹمنٹ (سی آئی ڈی) نے کی تھی۔ بتایا جاتا ہے کہ سال 1996ء میں گڈے عزیز نے روس اور چیچنیا کے درمیان جنگ میں چیچنیا کیلئے جہاد کیا تھا۔ عبدالعزیز سٹی آرمڈ ریزروڈ کے ریٹائرڈ کانسٹبل مہتاب علی کا بیٹا ہے اور وہ فرضی پاسپورٹ پر سعودی عرب روانہ ہوا تھا جہاں پر اس کے خلاف مقدمہ درج کرتے ہوئے سعودی پولیس نے اسے گرفتار کرکے جیل میں محروس رکھا تھا۔ اسپیشل انوسٹی گیشن ٹیم اسے اترپردیش سے گرفتار کرنے کے بعد حیدرآباد منتقل کیا اور اسے XII ویں ایڈیشنل چیف میٹروپولیٹن مجسٹریٹ کے اجلاس پر پیش کیا جائے گا۔

TOPPOPULARRECENT