Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ل10 لاکھ سالانہ آمدنی والوں کو گیس سبسڈی ختم کردینے کی تجویز

ل10 لاکھ سالانہ آمدنی والوں کو گیس سبسڈی ختم کردینے کی تجویز

معیشت کو بہتر بنانے مرکز کوشاں ‘ تلنگانہ اور آندھرا پردیش ترقی کی راہ پر گامزن : ایم وینکیا نائیڈو کا خطاب
حیدرآباد 14 نومبر ( سیاست نیوز ۔ پی ٹی آئی ) مرکز کی این ڈی اے حکومت ایسا صارفین کیلئے ایل پی جی سلینڈرس پر سبسڈی کو ختم کرنا چاہتی ہے جن کی سالانہ آمدنی 10 لاکھ روپئے سے زیادہ ہے ۔ مرکزی وزیر ایم وینکیا نائیڈو نے آج فیڈریشن آف اے پی و تلنگانہ چیمبرس آف کامرس کی ایوارڈ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وزیر پٹرولیم و قدرتی گیس دھرمیندر پردھان نے ان سے کہا کہ حکومت نے بے شمار غیر قانونی گیس کنکشنوں کا پتہ چلایا ہے اور ان کو سپلائی روکتے ہوئے کروڑہا روپئے کی بچت کر رہی ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی حکومت یہ منصوبہ بندی کر رہی ہے کہ جن افراد کی آمدنی سالانہ 10 لاکھ روپئے سے زیادہ ہے ان کو بھی گیس سبسڈی نہ دی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ جب اتنی آمدنی ہوتی ہے تو انہیں سبسڈی کی ضرورت کیوں ہوتی ہے ۔ انہوں نے سوال کیا کہ وزرا کو بھی سبسڈی کی ضرورت کیوں ہے ؟ ۔ انہوں نے بتایا کہ ملک میں تقریبا 30 لاکھ افراد نے گیس سبسڈی سے دستبرداری اختیار کرلی ہے اور یہ سبسڈی غریب عوام کو دی جائیگی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اب تک 15 شعبہ جات میں راست بیرونی سرمایہ کاری پالیسی میں جملہ 35 تبدیلیاں کی ہیں۔ پارلیمنٹ میں اہم بلوں کی منظوری کیلئے اپوزیشن جماعتوں کی تائید حاصل کرنے کی کوشش میں انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت اپنے ایجنڈہ کو آگے بڑھانے اپوزیشن جماعتوں سے بات کرنے تیار ہے ۔ حکومت چاہتی ہے کہ پارلیمنٹ سرمائی اجلاس میں جی ایس ٹی بل کو منظوری دلائی جائے ۔ انہوں نے کہا کہ ہماری حکومت کا ایجنڈہ ترقی ‘ بہتر حکمرانی ‘ انسداد غربت اور نوجوانوں اور خواتین کو با اختیار بنانا ہے ۔ اپوزیشن کو بھی اس معاملہ میں تعاون کرنے کی ضرورت ہے ۔عوام ترقی کی سیاست چاہتے ہیں۔ ہم تمام سیاسی جماعتوں سے ملک کے وسیع تر مفاد میں ترقیاتی ایجنڈہ کو آگے بڑھانے مدد حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ وزیر اعظم پر تنقیدیں کو مسترد کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ان افراد کو چاہئے کہ وہ وزیر اعظم کو ملی عوامی تائید کا رواداری کے ساتھ احترام کریں۔ انہوں نے کہا کہ جانتے بوجھتے یا انجانے میں ملک میں کچھ واقعات ہوئے ہیں۔ کسی کو ان کا استحصال کرکے ملک کو بدنام نہیں کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ہندوستان ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور بیرونی ممالک سے سرمایہ حاصل کر رہا ہے ۔ انہوں نے تلنگانہ اور آندھرا کے تعلق سے کہا کہ یہ دونوں تلگو ریاستیں ملک کی ترقی میں اہم رول ادا کر رہی ہیں۔ دونوں سے ہندوستان کے جملہ گھریلو پیداوار میں 8.17 فیصد حصہ ادا کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے بتایا کہ ان دونوں ریاستوں میں عوامی شعبہ کی ایسی کئی کمپنیاں ہیں جنہیں آزادی کے بعد قائم کیا گیا تھا ۔ انہوں نے بتایا کہ دونوں ریاستوں میں ترقی ہوتی جا رہی ہے اور یہاں نہ صرف وسائل ہیں بلکہ مہارتوں و ٹکنالوجی اور علم کی بھی کوئی کمی نہیں ہے ۔ نائیڈو نے ادعا کیا کہ مرکز میں اقتدار حاصل کرنے کے بعد سے حکومت ملک کو ترقی دلانے اور معیشت کو دوبارہ مستحکم کرنے بے تکان جدوجہد کر رہی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT