Sunday , October 22 2017
Home / جرائم و حادثات / ماؤیسٹوں کا آندھرا و تلنگانہ میں بند تقریباً بے اثر

ماؤیسٹوں کا آندھرا و تلنگانہ میں بند تقریباً بے اثر

حیدرآباد 3نومبر ( این ایس ایس ) ماؤیسٹوں کی جانب سے اوڈیشہ کے ملکانگری میں ہوئے مبینہ فرضی انکاؤنٹر کے خلاف معلنہ بند کا آندھرا پردیش اور اوڈیشہ میں کوئی خاص اثر نہیں دیکھا گیا ۔ آندھرا پردیش اور تلنگانہ کے ایجنسی اور ماؤیسٹوں سے متاثرہ مقامات پر قدرے کشیدگی دیکھی گئی تھی تاہم کوئی بڑا ناخوشگوار واقعہ دونوں ہی تلگو ریاستوں میںپیش نہیں آیا ۔ اوڈیشہ میں ہوئے اس انکاؤنٹر میں 24 اکٹوبر کو 32 ماؤیسٹوں کو گولی مار دی گئی تھی ۔ آج کے بند کے دوران یہ اطلاع ملی تھی کہ اوڈیشہ میں بھوانی پٹنم منڈل میں ایک سابق سرپنچ کو ماؤیسٹوں کو گولی مار دی گئی تھی اور اسکولس کو بند کردیا گیا تھا ۔اس کے بعد دونوں ریاستوں کے ایجنسی علاقوں کے عوام میں سراسیمگی پیدا ہوگئی تھی اور انہوں نے گھروں میں رہنے کو  ترجیح دی ۔ سابق سرپنچ جئینت کے تعلق سے کہا گیا ہے کہ اسے ماؤیسٹوں نے پولیس کا مخبر ہونے کا الزام عائد کرتے ہوئے انتہائی قریب سے گولی ماردی ۔ دونوں ریاستوں کے ایجنسی علاقوں کے کئی گاووں میں بند کا اہتمام کیا گیا تھا تاہم پولیس دستوں کی جانب سے مسلسل تلاشی اور ہوٹلس و لاجس کی نگرانی کی وجہ سے کوئی بڑآ ناخوشگوار واقعہ پیش نہیں آیا ۔ ان علاقوں میں کئی مقامات پر بسیں نہیں چلائی گئی تھیں کیونکہ حکام نے احتیاطی اقدام کے طور پر بسوں کو سڑکوں سے ہٹالیا تھا ۔ مسلح پولیس کے دستوں کو اہم مقامات پر متعین کردیا گیا تھا اور چھتیس گڑھ اور اوڈیشہ سے ملنے والے چیک پوسٹ پر وسیع انتظام کیا گیا تھا ۔تلنگانہ میں ماؤیسٹوں کے اثر والے گاووں میں سکیوریٹی انتظامات پر خاص توجہ دی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT