Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / ماؤیسٹوں کی نعشیں آندھرا کو لائی گئیں تو محفوظ رکھی جائیں

ماؤیسٹوں کی نعشیں آندھرا کو لائی گئیں تو محفوظ رکھی جائیں

سیول لبرٹیز کارکن کی درخواست پر حیدرآباد ہائیکورٹ کی ہدایت
حیدرآباد 24 اکٹوبر ( پی ٹی آئی ) حیدرآباد ہائیکورٹ نے آج حکومت آندھرا پردیش کو ہدایت دی کہ اوڈیشہ کے ملکانگری ضلع میں ایک انکاؤنٹر میں ہلاک ماؤیسٹوں کی نعشیں اگر ریاست کو لائی جاتی ہیں تو انہیں محفوظ رکھا جائے ۔ کارگذار چیف جسٹس رمیش رنگناتھن اور جسٹس وینکٹ نارائنای پر مشتمل ایک ڈویژن بنچ سیول لبرٹیز کمیٹی کے سی چندر شیکھر کی پیش کردہ درخواست پر یہ احکام جاری کئے ۔ درخواست گذار نے کہا کہ پولیس نے یہ انکاؤنٹر کیا ہے اور ماؤیسٹوں کو ہلاک کیا ہے ۔ آندھرا پردیش کے ایڈوکیٹ جنرل نے عدالت کو مطلع کیا کہ ریاستی حکومت اس بات سے واقف نہیں ہے کہ آیا یہ فائرنگ کا تبادلہ آندھرا پردیش کے حدود میں ہوا ہے یا نہیں اور ابھی تک یہ اطلاع بھی نہیں ہے کہ یہ نعشیں آندھرا پردیش کو لائی جائیں گی ۔ اس درخواست پر سماعت چہارشنبہ تک ملتوی کردی گئی جبکہ عدالت نے کہا کہ اگر یہ نعشیں آندھرا پردیش کو لائی جاتی ہیں تو پھر تحقیقات کیلئے انہیں محفوظ رکھا جانا چاہئے ۔ اس انکاؤنٹر میں کم از کم 24 ماؤیسٹوں کو اوڈیشہ کے ملکانگری ضلع میں ہلاک کردیا گیا ۔ یہ ضلع آندھرا پردیش کی سرحد پر ہے ۔

TOPPOPULARRECENT