Friday , August 18 2017
Home / دنیا / مائنمار میں فوجی کارروائی پر اقوام متحدہ کی تشویش

مائنمار میں فوجی کارروائی پر اقوام متحدہ کی تشویش

اقوام متحدہ۔/12 اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) اقوام متحدہ میں انسانی حقوق کے ایک ماہر نے روہنگیا مسلمانوں کی غالب آبادی والی ریاست راکھاٹین کو ایک فوجی بٹالین کی روانگی پر گہری تشویش کا اظہار کیا ہے اور کہاکہ حکومت کو چاہیئے کہ وہ اپنی فورسیس کی طرف سے انسانی حقوق کے احترام کو یقینی بنائے۔ مائینمار میں انسانی حقوق کی صورتحال سے متعلق اقوام متحدہ کے خصوصی رابطہ کار یانگ لی نے اقوام متحدہ کے ہائی کمشنر برائے انسانی حقوق کے دفتر سے جاری بیان میں کہا ہے کہ ’’ گذشتہ روز رونما ہونے والی یہ تبدیلی سنگین تشویش کا باعث ہے ‘‘۔ کاچن اور راکھاٹین ریاستوں میں بدھسٹوں اور مسلمانوں کے درمیان فرقہ وارانہ فسادات کے سبب بالترتیب 100,000 اور 120,000 افراد گذشتہ پانچ سال سے بے گھر ہیں ان میں تقریباً تمام مسلمان ہی ہیں۔

 

تین خاتون دہشت گرد ملزمین کی لندن کی عدالت میں پیشکشی
لندن۔/12اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) برطانیہ میں اپنی نوعیت کے پہلے صرف خاتون دہشت گرد حملے کی سازش میں ملوث تین ملزم خواتین کو لندن کے قید خانہ سے ویڈیو رابطہ کے ذریعہ اس شہر کی عدالت میں پیش کیا گیا۔ 43 سالہ منیٰ دیچ، اس کی 21سالہ بیٹی زیزالین بولار اور ایک 20سالہ لڑکی خولہ برغوثی پر لندن کے ویسٹ سنٹر علاقہ میں چاقو سے مشتبہ حملے کی مبینہ منصوبی بندی کے الزام کے تحت مقدمہ چلایا جارہا ہے۔ یہ تینوں گذشتہ روز برونز فیلڈ ویڈیو رابطہ کے ذریعہ اولڈ باٹیلے میں حاضر ہوئے تھے۔ جج نے آئندہ پیشی 23اکٹوبر کو مقرر کی ہے۔ مسلح پولیس نے اپریل کے دوران شمالی لندن کے ریلیڈن میں ایک گھر پر دھاوے کے دوران ہولدر کے بازو پر گولی چلائی تھی۔ برغوثی کو اس گھر سے گرفتار کیا گیا تھا اور اسی روز دیچ کو بیرون لندن کے علاقہ کینٹ میں گرفتار کیا گیا تھا۔

TOPPOPULARRECENT